The news is by your side.

Advertisement

سانحہ نورانی، خودکش حملے میں 5 کلو بارودی مواد استعمال ہوا، جنرل شیر افگن

کوئٹہ: آئی جی ایف سی میجر جنرل شیر افگن نے کہا ہے کہ درگاہ شاہ نورانی دھماکے کی ابتدائی تفتیش میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ حملہ خودکش تھا جس میں پانچ سے چھ کلو بارودی مواد استعمال کیا گیا.

ان خیالات کا اظہار انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ آئی جی ایف سی میجر جنرل شیرافگن کا کہنا ہے کہ سانحہ نورانی دھماکے میں خودکش جیکٹ استعمال کی گئی جس میں بال بیرنگ اور نائن ایم ایم کے بلٹ استعمال کئے گئے۔

اُن کا کہنا تھا کہ خود کش حملہ آور دھمال کے وقت جائے حادثہ پہنچا اور اُس نے عوام کا رش دیکھ کر اپنے آپ کو دھماکے سے اڑا دیا، خود کش جیکٹ میں بال بیرنگ اور نائن ایم ایم کی گولیاں ڈالی گئیں تھی جس کے باعث زیادہ نقصان ہوا۔


پڑھیں: ’’ درگاہ شاہ نورانی میں دھماکا،65افراد جاں بحق، 100 سے زائد زخمی ‘‘


 اُن کا کہنا تھا کہ جائے وقوعہ سے شواہد اکھٹے کرلیے ہیں اور جلد ملزمان کو گرفتار کر کے کیفرکردار تک پہنچایا جائے گا۔ شیر افگن نے حادثے میں جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین سے اظہارِ تعزیت کیا اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لیے نیک خواہشات کا اظہار بھی کیا۔

مزید پڑھیں: ’’ پہاڑوں‌ میں‌ گھرا شاہ نورانی کا مزار صدیوں‌ پرانا ہے ‘‘


 خیال رہے گزشتہ روز بلوچستان کے علاقے حب میں واقعے قدیمی مزار شاہ نورانی کے مزار پر بم دھماکہ ہوا تھا جس کے نتیجے میں اب تک 65 افراد جاں بحق جبکہ سینکڑوں زخمی ہوئے ہیں، متاثر ہونے والے افراد کو گزشتہ رات ہی کراچی کے سرکاری اسپتالوں میں منتقل کردیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: ’’ سانحہ درگاہ نورانیٌ میں این ڈی ایس اور را ملوث ہیں، ذرائع ‘‘


 سانحہ نورانی میں نشانہ بننے والے زیادہ تر افراد کا تعلق کراچی کے مختلف علاقوں سے تھا جو زیارت کے لیے گئے ہوئے تھے۔
Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں