نوشکی حملہ: 14افراد کو تین بار،ایک مجرم کو 4 بار سزائے موت کا حکم -
The news is by your side.

Advertisement

نوشکی حملہ: 14افراد کو تین بار،ایک مجرم کو 4 بار سزائے موت کا حکم

نوشکی: پولیس اہلکاروں پر فائرنگ اور لیویز اہلکار کے قتل میں ملوث 15 ملزمان کو انسداد دہشت کی عدالت نے جرم ثابت ہونے پر سزائے موت اور جرمانے کی سزا سُنا دی۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ سال 18 فروری کو خاران پولیس نے بلوچستان کے علاقے کانڑی کے مقام پر کارروائی کرتے ہوئے 15 ملزمان کو گرفتار کیا تھا، جن کے قبضے سے غیرقانونی اسلحہ اور 2 ہینڈ گرنیڈ بھی برآمد ہوئے تھے۔

آج ملزمان کو انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں جج جعفر خان مینگل نے 15 ملزمان پر جرم ثابت ہونے کے بعد سزائے موت اور جرمانے کی سزا سنائی۔ عدالت نے 14 ملزمان کو 3 بار جبکہ ایک ملزم کو 4 بار سزائے موت دینے کا فیصلہ جاری کیا۔

عدالت نے ملزم اشرف کو مختلف دفعات کے تحت 4 مرتبہ سزائے موت جبکہ 14 ملزمان کو تین مرتبہ سزائے موت اور 2 لاکھ روپے جرمانے کی سزا سنائی، سزا پانے والے افراد پر پولیس پر فائرنگ اور لیویز اہلکار عمر شاہد کے قتل سمیت ڈی پی او خاران محمد انور بادینی اُن کے ڈرائیور خدائے نظر کو بھی زخمی کرنے کا الزام ہے‘‘۔

پولیس حکام نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ملزمان نے دورانِ تفتیش قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں پرحملوں سمیت متعدد وارداتوں میں ملوث ہونے کا اعتراف کیا ہے۔


15 accused sentenced to death by arynews

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں