The news is by your side.

Advertisement

اب کوئی این آراو نہیں ہوگا، شریف خاندان رنگے ہاتھوں پکڑا گیا، عمران خان

اسلام آباد: تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے نواز شریف سے سوال کیا ہے کہ آپ نے کون سا کارنامہ کیا ہے جو ریلی لے کر جی ٹی روڈ پر جا رہے ہیں؟ انہوں نے کہا کہ اب کوئی این آر او نہیں ہوگا، شریف خاندان رنگے ہاتھوں پکڑا گیا ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے پی ٹی آئی کی سینٹرل ایگزیکٹیو کمیٹی کےاجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، عمران خان نے نون لیگ کی ریلی سے متعلق کہا کہ عدالتی فیصلے کے خلاف احتجاج کا مقصد بلیک میلنگ ہے، ہمیں کنٹینر کا طعنہ دینے والے اب خود کنٹینر پر جا رہے ہیں۔

کپتان نے پی ٹی آئی کارکنوں کو ریلی میں رکاوٹ نہ ڈالنے کی ہدایت کر دی، انہوں نے کہا کہ کارکن تو ریلی کےراستےمیں سارا ٹبر چور ہے کے بینرز لگانے والے تھے  لیکن ہم ملک میں کسی قسم کا انتشارنہیں چاہتے۔

پھرسے کہہ رہاہوں کہ کسی کے اشارے پر فوج کے خلاف گفتگو کی جارہی ہے، نواز لیگ اور میر شکیل مل کر پروپیگنڈا کر رہے ہیں، عمران خان کا کہنا تھا کہ ن لیگ کے پاس شریف خاندان سے الگ ہونے کا سنہری موقع تھا۔

اس سے قبل پی ٹی آئی کی سینٹرل ایگزیکٹیو کمیٹی کے اجلاس سےخطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ہم نے ایک مافیا کیخلاف جنگ لڑی، لاک ڈاؤن کے موقع پر وزیراعلیٰ کے پی کے اور کارکنوں کے ساتھ جو سلوک کیا گیا جمہوریت میں ایسا نہیں ہوتا۔

ایک طویل جدوجہد کے بعد عدالتی فیصلہ آیا جس پرپوری قوم خوش ہے، ملک میں جمہوریت کےنام پرآمریت تھی، ایک خاندان کو بچانےکیلئے ن لیگ سرکاری وسائل استعمال کررہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ عوام کے ٹیکس کے پیسوں سے لوگوں کو استقبال کیلئے تیارکیا جا رہا ہے، لوگوں کو جمع کرکے آپ کیا پیغام دینا چاہتے ہیں، تاثریہ دیا جا رہا ہے کہ ان کیلئے الگ اورعوام کیلئے الگ قانون ہے۔

عمران خان نے نوز شریف کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ جب دھاندلی کے خلاف ہم نکلے تو کہا گیا کہ جمہوریت ڈی ریل کرنے جارہے ہیں، پاناما لیکس پرسڑکوں پرگئے تو ہم پرسازش کے الزامات لگائے گئے۔

اب آپ عدالتی کے فیصلےکے خلاف کیا کرنےجارہےہیں، اب عدلیہ اور فوج پر سازش کے الزامات لگائے جارہے ہیں، آپ ملک کےآئین کےخلاف جانے لگے ہیں آپ پر آرٹیکل چھ لگنا چاہئیے، آپ کا کیا کارنامہ ہے جو ریلی لے کر جی ٹی روڈ پرجارہے ہیں۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ ہم اس سے زیادہ عوام کو سڑکوں پر لاسکتے ہیں، اس قسم کے دباؤ ڈالنے سے نیب سے بچ نہیں سکیں گے، اب کوئی این آراو نہیں ہوگا، یہ رنگےہاتھوں پکڑے گئے ہیں، قوم سوچ بھی نہیں سکتی تھی کہ ایک طاقتورقانون کی گرفت میں آئیگا۔

عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ ہم الیکشن کی تیاری کر رہے ہیں، جلد عوام کےپاس جائیں گے، مجرم کی چوری بچانے کیلئے ن لیگ چلے گی تو الیکشن جلد ہوں گے، 13اگست کوشیخ رشید کےساتھ پی ٹی آئی بھی جلسہ کررہی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی نے الیکشن کمیشن پرخدشات کا اظہارکیا ہے، الیکشن کمیشن پر اعتماد نہیں ہے،سارے ادارے مفلوج کیے گئے ہیں.

عمران خان نے کہا کہ یہ لوگ تو سرعام کہہ رہے ہیں کہ ہم عدالت کا فیصلہ نہیں مانتے، ہم عدلیہ اور فوج کے ساتھ کھڑے ہیں، عدلیہ کے تحفظ کیلئے کارکنان کو کال دینی پڑی تو ضرور دیں گے۔

اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں