The news is by your side.

Advertisement

وفاقی دار الحکومت بھی ڈکیتوں سے محفوظ نہ رہا، 24 گھنٹوں میں متعدد وارداتیں

اسلام آباد: وفاقی دار الحکومت بھی ڈکیتوں سے محفوظ نہ رہا، اسلام آباد کے مختلف علاقوں میں 24 گھنٹے کے دوران ڈکیتی کی متعدد وارداتیں ہوئیں۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد کے مختلف علاقوں میں 24 گھنٹے کے دوران ڈکیتی کی متعدد وارداتیں ہوئیں، ڈاکو لاکھوں روپے مالیت کے زیورات، نقدی اور دیگر سامان لے اڑے۔

ڈاکوؤں کی واردات: ٹرک لے کر آئے اور 66 ایل ای ڈیز لوڈ کر کے فرار ہو گئے۔

تھانہ کوہسار کی حدود سیکٹر ایف 6 ٹو میں گھر میں ڈکیتی ہوئی، جس میں ڈاکو 80 تولے زیورات، 8 لاکھ روپے نقدی اور پرائز بانڈ لوٹ کر آسانی سے فرار ہو گئے۔

دوسری طرف تھانہ ترنول کی حدود میں ڈاکوؤں نے بڑی واردات کرتے ہوئے 66 ایل ای ڈیز چھین لیں، 10 ملزمان ٹرک لے کر آئے اور سامان لوڈ کر کے فرار ہو گئے، مزاحمت پر گارڈ کو بھی زخمی کر دیا۔

تھانہ کورال کی حدود میں ڈاکوؤں نے شہری کو لوٹا اور اسے 3 لاکھ روپے نقدی سے محروم کر دیا جب کہ اس کی گاڑی بھی چھین کر لے گئے۔


یہ بھی پڑھیں:  اسلام آباد: پہلی مرتبہ خواجہ سرا کو ڈرائیونگ لائسنس جاری


تھانہ کھنّہ کی حدود میں ڈاکوؤں نے دکان سے نقدی اور موبائل فون لوٹ لیا۔ پولیس کے مطابق تین وارداتوں کا مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ اسلام آباد پاکستان کا سیف سٹی سمجھا جاتا ہے، لیکن ان وارداتوں سے ایسا معلوم ہوتا ہے کہ سیف سٹی ڈکیتوں کے لیے بھی سیف بن گیا ہے، جہاں شہری اب لٹیروں سے محفوظ نہیں رہے ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں