The news is by your side.

Advertisement

جموں و کشمیر پر بھارتی ظلم و بربریت اور ریاستی دہشت گردی کے 74 سال مکمل

اسلام آباد : جموں وکشمیر پر بھارت کے جبرو استبداد، ظلم و بربریت اور ریاستی دہشت گردی کے 74 سال مکمل ہوگئے ہیں ، پاکستان سمیت دنیا بھرمیں موجود کشمیری آج یوم سیاہ منا رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان سمیت دنیا بھرمیں موجود کشمیری آج یوم سیاہ منا رہے ہیں، 27اکتوبر1947، مقبوضہ جموں و کشمیر کی تاریخ کا سیاہ ترین دن ہے ، اس دن بھارت نے اپنی غاصب فوج کو وادی میں اتارا اورہندوستان آج تک اپنے جارحانہ اور غاصبانہ طرز عمل پر کار بند ہے۔

27اکتوبرکو ہندوستان نےعالمی قوانین پامال کر تےہوئےکشمیرپرقبضہ کیا ، بھارتی اقدام کشمیری عوام پرکھلی جارحیت اور یواین چارٹر کی سنگین خلاف ورزی تھی

تقسیم ہند کےوقت ریاستوں کو استصوابِ رائےسے فیصلےکااختیاردیاگیاتھا، کشمیریوں کی مقامی قیادت نے کشمیر کے پاکستان کے ساتھ الحاق کا فیصلہ کیا لیکن مہاراجہ ہری سنگھ نے ساز باز کر کے ہندوستان کے ساتھ جعلی معاہدہ کیا، اس معاہدے کی قانونی و تاریخی حیثیت ثابت شدہ نہیں۔

بھارت جموں و کشمیر میں بدترین جنگی جرائم کا بھی مرتکب ہے جبکہ ہندو انتہا پسند بی جے پی کشمیری مسلمانوں کی نسل کشی پر تلی ہوئی ہے۔

مقبوضہ کشمیر کی مقامی قیادت بھی کالے اقدامات کے خلاف سراپا احتجاج ہے اور مقبوضہ کشمیر میں تاریخ کا بدترین لاک ڈاوٴن 814 دن سے نافذ ہے

ترکی،ملائیشیا اور ایران کی قیادت کا مسئلہ کشمیر پر اصولی مؤقف دنیا کے سامنے ہے ، ترک صدر نےاقوام متحدہ اجلاس میں مسئلہ کشمیرکےحل پرزوردیا جبکہ ملائشیا کے وزیرا عظم نےبھارتی اقدامات کو مقبوضہ وادی پر قبضہ قرار دیا اور 16یورپین پارلیمنٹ ممبران نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر خط لکھا۔

حریت پسند کشمیری رہنما سید علی گیلانی کی بھارتی حکام نے خود تدفین کی اور سید علی گیلانی کے خاندان کو جنازے میں شامل نہیں ہونے دیا گیا ، سید علی گیلانی کی وصیت کے مطابق انہیں سری نگر کےشہداقبرستان میں دفن ہونا تھا لیکن بدحواس مودی حکومت نے سیدعلی گیلانی کی میت کی انکی رہائشگاہ کے قریب تدفین کی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں