مقبوضہ کشمیر میں 59ویں روز بھی کرفیو اورکشیدگی برقرار -
The news is by your side.

Advertisement

مقبوضہ کشمیر میں 59ویں روز بھی کرفیو اورکشیدگی برقرار

سری نگر : مقبوضہ کشمیرمیں مسلسل انسٹھ ویں روز بھی کرفیو اور کشیدگی برقرار ہے، حریت رہنماؤں نے بھارتی وزیر داخلہ اور ان کے وفد سے ملنے سے انکار کردیا ہے، نہتے کشمیریوں پرظلم ڈھانے کا نیا بھارتی فورسز نے پیلٹ گن کے بعد مرچوں کے شیل تیار کرلئے ہیں۔

KASHMIR POST 2

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں مسلسل کرفیو نے پوری وادی کو جیل میں تبدیل کردیا، عوام گھروں میں محصور، نوجوان تعلیم سے محروم اور ٹریفک سے خالی سڑکوں پر بھارتی فوجی دندناتے پھررہے ہیں۔


 مزید پڑھیں : مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی وزیرداخلہ کی آمد پرمظاہرے،احتجاج اورہڑتال


مودی سرکار نے نہتے کشمیریوں کے لئے نیا ہتھیار تیار کرلیا ہے، پیلٹ گن کے بعد اب کشمیری نوجوانوں، عورتوں اور بچوں کو مرچوں کے شیل سے نشانہ بنایا جائے گا، بھارت کے سفاک وزیرداخلہ نے مرچوں کے شیل کے استعمال کی منظوری دیتے ہوئے نرالی منطق دی کہ مرچوں کے شیل نقصان دہ نہیں۔

kashmir

بھارتی فورسز کی جانب سے طاقت کے اندھا دھند استعمال کے باوجود سرینگر کے گلی کوچوں میں پاکستانی پرچم پوری شان سے لہرا رہا ہے، کرفیو کے باوجود بھارتی مظالم اور غاصبانہ قبضے کے خلاف ہزاروں افراد روز احتجاج کر رہے ہیں، مظاہرین پر بھارتی فورسز کے وحشیانہ تشدد اور پیلٹ گن کے استعمال سے خواتین اور بچوں سمیت سینکڑوں افراد زخمی ہوگئے۔


 مزید پڑھیں : برہان وانی شہادت کے بعد کشمیریوں کے لیے رول ماڈل بن گئے،سابق سربراہ را


دوسری جانب مقبوضہ وادی کا دورہ کرنے والے بھارتی وزیرداخلہ اوروفد سے مذاکرات کرنے سے کشمیری قیادت نے انکار کردیا، جبکہ حریت کانفرنس کی اپیل پروادی میں آٹھ ستمبرتک ہڑتال اورمظاہرے کئے جارہے ہیں۔

kashmir-3

گزشتہ روز بھارتی وزیرداخلہ کی آمد کے موقع پرکہیں مظاہرے،کہیں احتجاج اورکہیں ہڑتال کی گئی مظاہرین پرقابض افواج کے تشدد سے 80 افراد زخمی ہوگئے تھے۔


 مزید پڑھیں : بھارتی فوج کی بربریت،تین حریت پسند شہید


واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں گزشتہ ماہ تحریک آزادی کے نوجوان کمانڈر بربان مظفر وانی کی شہادت کے بعد سے مقبوضہ وادی میں بھارتی مظالم کے خلاف احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں