site
stats
پاکستان

مقبوضہ کشمیر میں 62ویں روز بھی کشیدگی، شہدا کی تعداد92 ہوگئی

سری نگر : مقبوضہ کشمیر میں باسٹھ روز سے کشیدگی جاری ہے، متعدد علاقوں میں غیراعلانیہ کرفیو نافذ ہے جبکہ بھارتی فورسز کی فائرنگ سے ایک اور کشمیری کی شہادت کے بعد آٹھ جولائی سے اب تک شہدا کی تعداد بانوے ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیرمیں بھارتی تسلط سے آزادی کی تحریک عروج پر ہے، ہرگلی کوچے میں پاکستان زندہ باد اور آزادی کے نعروں کی گونج ہے، بھارتی فوجیوں کے کڑے پہرے کے باوجود ہزاروں کشمیریوں کا احتجاج جاری ہے جبکہ فورسزکے تشدد سے درجنوں مظاہرین زخمی ہوگئے ہیں۔


مزید پڑھیں : کشمیریوں پر ظلم ڈھانے کیلئے مرچوں کے شیل تیار


وادی میں روز مرہ ضروریات اور ادویات کی شدید قلت پیدا ہو گئی ہے، بھارتی تشدد سے دس ہزارسے زائد افراد زخمی ہوگئے جبکہ پیلٹ گن کے چھروں نے تین سو سے زائد نوجوانوں کو بینائی سے محروم کردیا ہے۔

حریت کانفرنس کی اپیل پر سولہ ستمبر تک ہڑتال اور مظاہرے ہوں گے، عید کے دن آزادی مارچ کیا جائے گا اور اقوام متحدہ کے دفترمیں احتجاجی خط پیش کیا جائے گا۔


مزید پڑھیں:  برہان وانی شہادت کے بعد کشمیریوں کے لیے رول ماڈل بن گئے،سابق سربراہ را


یاد رہے کہ حریت رہنماؤں نے بھارتی وزیر داخلہ اور ان کے وفد سے ملنے سے انکار کردیا ہے جبکہ نہتے کشمیریوں پرظلم ڈھانے کا نیا بھارتی فورسز نے پیلٹ گن کے بعد مرچوں کے شیل تیار کرلئے ہیں۔

واضح رہے کہ مقبوضہ کشمیر میں گزشتہ ماہ تحریک آزادی کے نوجوان کمانڈر بربان مظفر وانی کی شہادت کے بعد سے مقبوضہ وادی میں بھارتی مظالم کے خلاف احتجاجی مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے اور اب تک 92 کشمیری شہید اور دس ہزار سے زائد افراد زخمی ہوچکے ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top