The news is by your side.

Advertisement

مودی حکومت کے گھناؤنے عزائم، کشمیریوں‌ کے حق میں‌ دعا کرنے پر بھارت کے مسلمان سیاسی رہنما گرفتار

سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں کرفیو لگے مسلسل تیرہ روز گزر گئے، بھارتی فوج نے سیاسی کارکنان کے ساتھ اب صحافیوں کی گرفتاریاں بھی شروع کردیں جبکہ مودی حکومت نے ممبئی سے  آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے رہنما وارث پٹھان کو کشمیریوں کے حق میں دعا کرنے پر گرفتار کرلیا

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر بھارت کی جانب سے نافذ کیے جانے والے کرفیو کے بعد جنت نظیر وادی دنیا کی سب سے بڑی انسانی جیل کی صورت میں تبدیل ہوگئی۔

وادی میں مسلسل کرفیو کے باعث اشیائےخورونوش اور ادویات کی قلت پیدا ہوگئی جس کے باعث شہریوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے، بین الاقوامی انسانی حقوق کی تنظیم کے مطالبے کے باوجود بھارت نے وادی میں انٹرنیٹ، موبائل فون اور ٹی وی نشریات بھی تاحال بند رکھی ہوئی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: مقبوضہ کشمیر میں کرفیو کا مسلسل 12واں روز

بھارتی فوج نے گریٹر کشمیر اخبار سے وابستہ صحافی محمد عرفان کو بھی حراست میں لے لیا جبکہ اس سے قبل حریت قیادت اور سیکڑوں نہتے کشمیریوں کو بلاجواز گرفتار کر کے پابندِ سلاسل کیا گیا۔

کشمیر میڈیا سروس کی رپورٹ کے مطابق بھارتی حکومت نے ممبئی میں آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے رہنما وارث پٹھان کو کشمیریوں کے حق میں دعا کرنے پر گرفتار کرلیا، حریت فورم اور دیگر مسلمان تنظیموں نے حکومتی اقدامات کے خلاف عوام سے سڑکوں پر آنے کی اپیل کی جس کے بعد عوام نے  شدید احتجاج کیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں