The news is by your side.

Advertisement

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی بربریت کا سلسلہ جاری، دو کشمیری نوجوان شہید

سری نگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے ریاستی دہشت گردی کرتے ہوئے مزید 2 کشمیریوں کو شہید کردیا۔

کشمیر میڈیا سروس کی رپورٹ کے مطابق بھارتی فوج نے گلگام کے علاقے میں محاصر کیا اور گھروں میں زبردستی داخل ہوکر خواتین کے ساتھ بدسلوکی جبکہ سیکڑوں بچوں، بوڑھوں اور نوجوانوں کو گرفتار کیا۔

آپریشن کے دوران پولیس اہلکاروں نے دو نوجوانوں کو گھر سے باہر نکالا اور پھر انہیں فائرنگ کر کے شہید کردیا۔ نوجوانوں کی شہادت کے بعد کلگام میں عوام نے احتجاج شروع کیا جو مقوضہ کشمیر کے دوسرے شہروں تک پھیل گیا۔

اپنے جرائم کو چھپانے کے لیے کشمیر کی کٹھ پتلی انتظامیہ نے کلگام میں موبائل فون اور انٹرنیٹ سروس بند کردی تاکہ مظلوموں کی آواز دنیا تک نہ پہنچ سکے۔

یاد رہے کہ تین روز قبل بھارتی فوج نے مقبوضہ کشمیر کے علاقے بارہ مولا میں آپریشن کے دوران ایک کار سوار کو گاڑی سے نیچے اتار تین سالہ نواسے کے سامنے فائرنگ کر کے قتل کردیا تھا۔

مزید پڑھیں: مقبوضہ کشمیرمیں ظلم کی انتہا، 3سالہ نواسے کے سامنے نانا کی شہادت، بچے کی ویڈیو نے سب کو رلا دیا

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز کی فائرنگ سے شہید ہونے والے شخص کی شناخت 65 سالہ بشیر احمد خان  کے نام سے ہوئی جو اپنے نواسے کے ہمراہ سری نگر سے بارہ مولا جار ہے تھے۔

تین سالہ نواسہ اپنے نانا کی میت پر بیٹھ کر رو رہا تھا جس کی ویڈیو انٹرنیٹ پر وائرل ہوئی مگر عالمی برادری یا سیکیورٹی کونسل نے اُس کا کوئی نوٹس نہیں لیا۔

خیال رہےقابض بھارتی فورسز دو ہفتے میں 37 سے زائد کشمیریوں کوشہید کرچکی ہیں جبکہ بھارتی فورسز گھر گھر تلاشی میں خواتین سے بدتمیزی اور نوجوانوں کو بلاجواز گرفتارکررہی ہیں۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں