site
stats
پاکستان

مقبوضہ کشمیر میں نماز جمعہ کے بعد آزادی جلسہ

سرینگر: مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی ریاستی دہشت گردی عروج پر ہے۔ بھارتی فورسز کے ہاتھوں مزید 4 کشمیری نوجوانوں کی شہادت کے بعد مختلف علاقوں میں مظاہرے کیے گئے۔ آج نماز جمعہ کے بعد آزادی جلسہ کیا جائے گا۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم اپنی انتہا پر ہیں۔ عالمی برادری اور انسانی حقوق کے علمبرداروں کی بے حسی برقرار ہے۔

آزادی کے متوالے کشمیری ہر روز اپنے لہو سے آزادی کے چراغ روشن کر رہے ہیں۔ مقبوضہ کشمیرکے گلی کوچے بھارت مخالف اور آزادی کے نعروں سے گونج رہے ہیں۔

گھر گھر تلاشی کے بہانے بھارتی فورسز بے گناہ کشمیریوں کو گرفتار کر رہی ہیں جس کا مقصد کشمیریوں کی آواز کو دبانا ہے۔

وادی میں چار نوجوانوں کی شہادت کے بعد بھارتی فورسز کے خلاف بڑے پیمانے پر احتجاج کیا گیا۔ فورسز کے مظاہرین پر تشدد سے متعدد افراد زخمی ہوگئے۔

حریت رہنما میر واعظ عمر فاروق کا کہنا ہے کہ بھارت نے کشمیر پر غیر اعلانیہ جنگ مسلط کر رکھی ہے۔ حریت کانفرنس کی اپیل پر بھارتی مظالم کے خلاف احتجاج میں 15 دسمبر تک توسیع کردی گئی ہے جبکہ آج نماز جمعہ کے بعد آزادی جلسہ کیا جائے گا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top