The news is by your side.

Advertisement

خواتین زیادتی کیس کے بعد لاہور سیالکوٹ موٹر وے سے متعلق اہم فیصلہ

لاہور: خواتین زیادتی کیس کے بعد لاہور سیالکوٹ موٹر وے پر مستقل بنیاد پر افسران و اہل کار تعینات کیے جانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور سیالکوٹ موٹر وے پر 40 اے ایس آئی، سب انسپکٹرز، 20،20 کانسٹیبلز اور ہیڈ کانسٹیبلز مستقل بنیاد پر تعینات کیے جائیں گے۔

اس سلسلے میں ڈی آئی جی اسٹیبلشمنٹ نے خواہش مند اہل کاروں سے درخواستیں طلب کر لی ہیں۔

ایک اے ایس آئی کو بطور سب انسپکٹر موٹر وے پولیس میں بھجوایا جائے گا، آئی جی پنجاب انعام غنی نے آر پی اوز، ڈی پی اوز کو افسران کے نام بھجوانے کی ہدایت کر دی۔

خاتون زیادتی کیس کے بعد کرول پولیس چوکی کے حوالے سے بڑا قدم

واضح رہے کہ چند دن قبل گجرپورہ میں کرول پولیس چوکی کے حوالے سے بھی ایکشن لیا گیا تھا، اے آر وائی نیوز کی خبر پر پولیس حکام نے نوٹس لیتے ہوئے چوکی پر اہل کار بڑھا دیے تھے۔

پولیس حکام نے کرول چوکی پر اہل کاروں کی تعداد بڑھانے کے ساتھ ساتھ علاقے کی حدود میں گشت کے لیے ایک گاڑی اور 2 موٹر سائیکلیں بھی فراہم کر دی تھیں، اس سے قبل اہل کاروں کے پاس کوئی سرکاری گاڑی نہیں تھی۔

کرول چوکی میں اہل کاروں کی تعداد 4 تھی جسے بڑھا کر 10 کیا گیا، ایس ایچ او گجرپورہ کا کہنا تھا کہ گاڑی اور بائکس ملنے کے بعد پولیس نے علاقے میں گشت بھی شروع کر دیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں