The news is by your side.

Advertisement

پیٹرول کی قیمت میں2 روپے فی لیٹر اضافہ کی تجویز

اسلام آباد : حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں تیرہ روپے تک کے اضافے کی تیاری کرلی گئی ہے، جس میں پیٹرول اور ڈیزل کی قیمت میں 2 روپے فی لیٹر اضافے کی سفارش کی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایک طرف مہنگائی کاجن بوتل سے باہر تو دوسری جانب حکومت بھی عوام کی پریشانی میں اپنا حصہ ڈالنے کو تیار ہے، آئل اینڈ گیس ریگولیٹری اتھارٹی (اوگرا) نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کی سمری ارسال کردی ہے، سمری میں مٹی کے تیل کی قیمت میں بھی 13 روپے فی لیٹر اضافے سفارش کی گئی ہے۔

پیٹرول اورڈیزل کی قیمت میں 2 روپے جب کہ لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 7 روپے 75 پیسے فی لیٹر اضافے کی تجویز دی گئی ہے، جس کے بعد مٹی کے تیل کی فی لیٹر قیمت ستاون روپے جبکہ پیٹرول پچھہتر اور ڈیزل چوراسی روپے فی لیٹر ہو جانے کا خدشہ ہے۔


مزید پڑھیں : پندرہ روز کی پالیسی تبدیل، حکومت نے عوام پر پھر پیٹرول بم گرادیا


معاشی تجزیہ کاروں کے مطابق عالمی قیمتوں کے مقابلے میں پاکستانی پیٹرولیم مصنوعات کی اڑتیس فیصد زائد قیمت ادا کررہے ہیں اوراس کی وجہ حکومتی ٹیکس ہے ، ہر ماہ پیٹرولیم مصنوعات پرسیلز ٹیکس سے پچس ارب روپے اور دس ارب روپے پیٹرولیم لیوی کی مد میں حکومت کی جیب میں چلے جاتے ہیں، عوام نے رواں مالی سال ڈیزل پر انیس روپے انتالیس پیسے، پیٹرول پر دس روپے اکہتر پیسے ٹیکس ادا کیا ہے‌‌۔

یاد رہے اوگرا کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات سے متعلق سمری وزارتِ خزانہ کو ارسال کی جاتی ہے جس میں حکومت سے قیمتیں بڑھانے ، کم کرنے یا پھر اُن کو برقرار رکھنے کی سفارش کی جاتی ہے، وفاقی وزیر خزانہ اوگرا سمری پر منظوری یا اُسے مسترد کرتے ہیں جس کے بعد پیٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں کا تعین کیا جاتا ہے

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں