The news is by your side.

Advertisement

بھارت مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیاں بند کرے، او آئی سی

اسلام آباد: اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) نے مطالبہ کیا ہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیاں بند کرے۔

تفصیلات کے مطابق اسلامی تعاون تنظیم انسانی حقوق کمیشن نے مسئلہ کشمیر پر موقف دیتے ہوئے کہا ہے کہ کشمیریوں کو یو این قراردادوں کے تحت حق خود ارادیت دیا جائے۔

او آئی سی انسانی حقوق کمیشن کا کہنا تھا کہ کشمیریوں کی نسل کشی اور قتل عام جاری ہے، بھارت کے پانچ اگست کے اقدامات غیرقانونی اورغاصبانہ ہے۔

اسلامی تعاون تنظیم نے نہتے کشمیریوں پر پیلٹ گنز کے استعمال اور کشمیریوں کی گرفتاریوں، ماورائے عدالت قتل کی مذمت کی۔

او آئی سی نے مطالبہ کیا کہ اقوام متحدہ انسانی حقوق کمشنر، اقوام متحدہ انکوائری تشکیل دے، بھارت کی کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں کی تحقیقات کی جائیں۔

مزید پڑھیں: بھارتی فوج کشمیری خواتین کے ساتھ مردوں کوبھی زیادتی کا نشانہ بنارہی ہے، لرزہ خیز انکشاف

انسانی حقوق کمیشن نے اقوام متحدہ، عالمی برادری پر حقیقی کردار ادا کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ عالمی برادری بھارت پر مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے دباؤ بڑھائے۔

پاکستان نے او اٗئی سی انسانی حقوق کمیشن کے واضح موقف پر کا خیر مقدم کیا ہے، ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق پاکستان نے او آئی سی کے پہلے کھلے مذاکرے کو بھی سراہا، او آئی سی مذاکراہ تنظیم کے 25 تا 28 نومبر کو سیشن میں ہوا تھا۔

واضح رہے کہ برطانوی اخبار کی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا تھا کہ بھارتی فورسز مقبوضہ کشمیرمیں خواتین کے ساتھ مردوں کوبھی زیادتی کا نشانہ بنا رہی ہیں، پوری آبادی ذہنی اورجسمانی زیادتیوں کا شکارہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں