The news is by your side.

Advertisement

او آئی سی کا مقبوضہ کشمیرمیں اقوام متحدہ کا فیکٹ فائنڈنگ مشن بھیجنے کا مطالبہ

انقرہ : او آئی سی نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم وستم کی شدید مذمت کرتے ہوئے مقبوضہ کشمیرمیں اقوام متحدہ کا فیکٹ فائنڈنگ مشن بھیجنے کا مطالبہ کردیا، او آئی سی پارلیمانی فورم کے اعلامیے میں کشمیریوں کیلئے سلامتی کونسل کی قرارداد کے مطابق مستقبل کے انتخاب کے حق کا بھی مطالبہ کیا گیا۔

ترک دارلحکومت انقرہ میں او آئی سی پارلیمانی فورم کا اجلاس منعقد ہوا، جس میں پاکستان کی نمائندگی اسپیکر قومی اسمبلی ایازصادق نے کی، اجلاس کے اعلامیے میں کشمیریوں کے حق خود ارادیت کا اعادہ کیا گیا، او آئی سی رکن ملکوں نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم واستبداد کی شدید مذمت کی۔

oic1

او آئی سی اجلاس کے جاری اعلامیے میں اقوام متحدہ کافیکٹ فائنڈنگ مشن مقبوضہ وادی میں بھیجنے کا مطالبہ کیا اور کشمیریوں کو سلامتی کونسل کی قرارداد کے مطابق مستقبل کے انتخاب کا حق دینے پر زور دیا گیا۔

اعلامیے میں کہا گیا کہ جموں کشمیر کا مسئلہ پاکستان اوربھارت کے درمیان بنیادی تنازع ہے، بھارت کشمیریوں کی جائز جدوجہد آزادی کو دہشتگردی کا نام دے کر دنیا کو گمراہ کررہا ہے اور عالمی برادری بھارتی مظالم کی مذمت تک نہیں کررہی۔

اعلامیے میں مسئلہ کشمیر کے حل کا مطالبہ کیا گیا، جموں کشمیر کے مسئلے کو بماکو کانفرنس کے ایجنڈے میں شامل کرلیا گیا ہے۔

پاکستانی دفترخارجہ کا کہنا ہے کہ اجلاس میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کے ظلم پر مبنی دستاویزی فلم دکھائی گئی، اس موقع پر ایاز صادق کا کہنا تھا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں کالے قوانین کے تحت ظلم ڈھا رہا ہے اور کشمیری عوام کی جائز جدوجہد آزادی کو دہشتگردی سے منسوب کررہا ہے۔


مزید پڑھیں : کشمیرمیں کرفیو کا 101 واں روز، سو افراد شہید


ایاز صادق نے مزید کہا کہ مقبوضہ وادی میں نہتے کشمیریوں پر پیلٹ گن کا استعمال کیا جارہا ہے، انہوں نے شکوہ کیا کہ عالمی برادری نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی مذمت نہیں کی۔

انکا کہنا تھا کہ بھارت کشمیر سے توجہ ہٹانے کیلئے پورے خطے کی سلامتی کو خطرے میں ڈال رہا ہے، ایاز صادق نے اجلاس کو بتایا کہ بھارت اشتعال انگیز بیان بازی اور لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی بھی کررہا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں