استنبول، او آئی سی نے بیت المقدس کو فلسطین کا دارالحکومت قرار دے دیا oic
The news is by your side.

Advertisement

او آئی سی نے بیت المقدس کو فلسطین کا دارالحکومت قرار دے دیا

استنبول : اسلامی ممالک کی عالمی تنظیم نے بیت المقدس کو آزاد فلسطین کا دارالحکومت قرار دیتے ہوئے امریکی فیصلے کو خطے کے لیے خطرناک قرار دیتے ہوئے مسترد کردیا ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق اس بات کا فیصلہ بدھ کے روز مسلمان قائدین نے او آئی سی کے اہم اجلاس میں کیا جہاں فلسطین کو بہ طور آزاد ریاست اور مشرقی یروشلم (بیت المقدس) کو اس کا دارالحکومت قرار دینے کا متفقہ فیصلہ کیا گیا جب کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے فیصلے کی سخت الفاظ میں مذمت کی گئی۔

ترجمان او آئی سی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ 57 اسلامی ممالک نے پائیدار امن کے لیے علیحدہ علیحدہ دو ریاست کے فارمولے کی بنیاد پرتصفیے کے پُرامن حل پر اتفاق کیا گیا ہے جس کے لیے مشترکہ لائحہ عمل اور حکمت عملی وضع کرنے کی ضرورت پر زور دیا گیا ہے۔

ترجمان او آئی سی کا مزید کہنا تھا کہ اجلاس کے شرکاء نے اقوام متحدہ سے پُر زور مطالبہ کیا کہ اسرائیلی قبضہ ختم کرانے کے لیے اپنا اثر و رسوخ اور استعمال کرے اور ڈونلڈ ٹرمپ کو اپنے فیصلے پر نظر ثانی کے لیے مجبور کرے۔

اسی سے متعلق :  آزاد فلسطینی ریاست کے لیے مسلم ممالک کو جدوجہد کرنا ہوگی، شاہد خاقان

او آئی سی اجلاس میں شرکاء کا کہنا تھا کہ سلامتی کونسل بیت المقدس کے معاملے پر منصفانہ کردار ادا کرے اور اگر اس ضمن میں کوئی اقدام نہ کیا گیا تو عالمی ادارے کا کردار سوالیہ نشان بن جائے گا۔

خیال رہے گزشتہ ہفتے امریکا کی جانب سے یروشلم کو فلسطین کا دارالحکومت تسلیم کیے جانے پر ترک صدر طیب اردگان نے مسلمان ممالک کی عالمی تنظیم کا اجلاس طلب کیا تھا.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں