The news is by your side.

Advertisement

لاہور میں پانچ سو سے زائد عمارتیں خطرناک قراردے دی گئیں

لاہور: ضلعی انتظامیہ نے 575 عمارتوں کو خطرناک قرار دینے کے بعد نقشہ پاس کرائے بغیر تعمیر کی گئی 161 کمرشل عمارتوں کو بھی غیرقانونی قرار دے دیا۔

اے آروائی نیوز کے نمائندے حسن حفیظ کے مطابق ڈی سی او لاہور کیپٹن (ر) محمد عثمان کی زیر صدارت ہائی لیول ڈیزائن کمیٹی کا اجلاس ہوا۔

اجلاس میں ای ڈی او فنانس کا کہنا تھا کہ شہر میں 161 کمرشل عمارتیں ایسی بھی ہیں جس کے نقشہ جات ہائی لیول ڈیزائن کمیٹی سے منظور شدہ نہیں ہیں یا وہ نقشہ جات کے ڈیزائن کے مطابق تعمیر نہیں کی گئیں ہیں۔

ڈی سی او لاہور نے علامہ اقبال ٹاون، واہگہ، گلبرگ، داتا گنج بخش ٹاون، شالیمار کے ٹاؤن میونسپل آفیسرز کو ہدایات جاری کی ہیں کہ وہ ان عمارتوں کا دورہ کریں اور نقشہ جات کے حوالے سے تفصیلی رپورٹ پیش کریں تا کہ ان عمارتوں کے حوالے سے حتمی فیصلہ کیا جائے۔

یاد رہے کہ اس سے قبل بھی ضلعی انتظامیہ نے شہر کی 575 عمارتوں کے خطرناک قرار دیا تھا جس میں سے224 کو مسمار کرنا تھا، اب تک 53 عمارتوں کو مسمار کر دیا گیا جبکہ 181 باقی ہیں ، 305 عمارتوں کی مرمت کرنا تھی جس میں سے 56 عمارتوں کو مرمت کیا گیا، 249 عمارتوں کی مرمت کا کام تاحال نہیں ہو سکا جبکہ 36 عمارتوں کا فیصلہ آنا باقی ہے۔

map

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں