The news is by your side.

Advertisement

پرانے ماڈل کی گاڑیوں پر سیٹ بیلٹ کا جرمانہ نہیں ہوگا

ریاض: سعودی محکمہ ٹریفک کا کہنا ہے کہ سیٹ بیلٹ خلاف ورزی کا اطلاق 1985 سے زیادہ پرانی گاڑیوں پر نہیں کیا جاتا۔

سعودی ٹریفک پولیس کے مطابق سیٹ بیلٹ کا قانون ڈارئیوروں کی حفاظت کے لیے ہے جس کا مقصد کسی بھی تصادم کی صورت میں ڈرائیور اور فرنٹ سیٹ پر بیٹھے ہوئے شخص کی حفاظت ہے۔

سعودی محکمہ ٹریفک کا کہنا ہے کہ سیٹ بیلٹ کی خلاف ورزی پر جرمانہ 150 ریال ہے لیکن وہی خلاف ورزی ایک ماہ کے دوران دوبارہ کی گئی تو اس صورت میں چالان کی رقم دگنییا 24 گھنٹے قید کی سزا دی جا سکتی ہے۔

سیٹ بیلٹ کا چالان صرف ڈرائیور پر ہی نہیں کیا جاتا بلکہ فرنٹ سیٹ پر بیٹھنے والا اگر سیٹ بیلٹ استعمال نہیں کرتا تو اس کا چالان بھی گاڑی کے مالک کے نام سے کیا جاتا ہے۔

ٹریفک پولیس کے مطابق 1985 یا اس سے پرانی ماڈل کی گاڑیوں میں جن میں سیٹ بیلٹ نہیں ہوتی تھی، ان پر چالان نہیں کیا جاتا، اگر ان گاڑیوں کے ڈرائیوروں پر چالان ہوجائے تو انہیں ختم کروایا جا سکتا ہے۔

سعودی محکمہ ٹریفک نے ڈرائیورز کو خبردار کردیا

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے سعودی عرب میں محکمہ ٹریفک نے مقامی اور غیرملکی ڈرائیورز کو خبردار کیا تھا کہ سڑک پر لین کے مطابق گاڑیاں چلائیں بصورت دیگر سخت جرمانہ ہوگا۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں