The news is by your side.

Advertisement

سو سال پرانے گھر کی دیواروں سے بھنبھناہٹ کی آوازیں آنے لگیں

نبراسکا: امریکا میں ایک سو سال پرانے گھر کی دیواروں سے بھنبھناہٹ کی آوازیں آنے لگیں تو گھر والے حیران رہ گئے، لیکن جب انھیں حقیقت معلوم ہوئی تو انھیں ایک ادارے سے مدد لینی پڑ گئی۔

تفصیلات کے مطابق امریکی شہر اوماہا میں ایک شادی شدہ جوڑے کے سو سال پرانے گھر کی دیواروں کے اندر سے قریباً 6 ہزار شہد کی مکھیاں نکل آئیں، جنھیں دیکھ کر وہ حیران رہ گئے۔

امریکی ریاست نبراسکا کے شہر اوماہا میں مکینوں نے حال ہی میں اپنے گھر کی دیواروں میں ایک چونکا دینے والی دریافت کی، معلوم ہوا کہ وہاں 6 ہزار شہد کی مکھیاں موجود تھیں۔

تھامس اور میریلو گوٹیری نے بتایا کہ وہ گھر کے باہر باغیچے میں ایسے پھول کافی عرصے سے اگا رہے تھے جن کا رس شہد کی مکھیاں پسند کرتی ہیں، لیکن انھوں نے کبھی سوچا بھی نہیں تھا کہ شہد کی مکھیاں ان کے 100 سال پرانے گھر کو اپنا گھر بنا لیں گی۔

میاں بیوی کا خیال ہے کہ یہ مکھیاں اینٹوں کو جوڑنے کے لیے استعمال ہونے والے سیمنٹ میں باہر کی طرف کسی سوراخ سے دیوار کے اندر داخل ہو گئی ہوں گی۔

تاہم ان کا کہنا تھا کہ انھیں شہد کی مکھیوں کی موجودگی کا اس وقت پتا چلا جب انھوں نے دیکھا کہ کچن کی کھڑکی کے باہر کچھ شہد کی مکھیاں بھنبھنا رہی ہیں، اور پھر انھیں گھر کی دوسری منزل پر 30 سے زیادہ مکھیاں نظر آئیں۔

تھامس کے مطابق پہلے انھوں نے سوچا کہ ان مکھیوں کا خاتمہ زہر سے کیا جائے لیکن پھر انھیں یاد آیا کہ انھوں نے ماحول کے لیے شہد کی مکھیوں کی اہمیت سے متعلق بہت ٹی وی پروگرامز دیکھے ہیں، تب انھوں نے اوماہا بی کلب سے رابطہ کیا، اس کلب نے 6 سو ڈالر کے عوض شہد کی مکھیوں کو محفوظ مقام پر منتقل کر دیا۔

مکھیاں نکالنے کے لیے کلب کے ارکان نے گھر کی دیوار میں پہلے ایک سوراخ کیا اور پھر ویکیوم کے ذریعے شہد کی مکھیوں کو جمع کیا گیا، دیوار کے اندر مکھیوں کی جانب سے بنایا گیا شہد بھی موجود تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں