The news is by your side.

Advertisement

کشمیر کےمعاملے پر بھارت کادوہرامعیار ہے،وزیراعظم

اسلام آباد : وزیراعظم نوازشریف کا کہنا ہے کہ مسئلہ کشمیر پر بھارت کا دوہرا معیار ہے ہے جس سے خطے میں مسائل پیدا ہو رہے ہیں۔

تفصیلات کےمطابق وزیر اعظم نواز شریف سے نیٹو ملٹری کمیٹی کے چیئر مین جنرل پیٹر نے ملاقات کی ہے جس میں مسئلہ کشمیر،پاک بھارت کشیدگی،خطے کی سیکورٹی صورتحال اور دو طرفہ امور پر تبادلہ خیال کیاگیا۔

اس موقع پر وزیر اعظم نواز شریف نے کہاکہ بھارت کا اڑی حملے کا پاکستان پر الزام غیر منصفانہ ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کی افغانستان سے متعلق پالیسی بالکل واضح ہے،افغانستان کا دشمن پاکستان کا دشمن ہے ،ہم نے ہمیشہ کہا کہ دہشت گردی مشترکہ دشمن ہے۔

nawaz-sharif-post

نوازشریف نے کہا کہ افغانستان میں امن نہ صرف خطے بلکہ پاکستان کے لیے بھی ضروری ہے،امن کے حصول کے لیے پاکستان کی سول اور عسکری قیادت افغان حکام سے رابطے میں ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ آرمی چیف اور میں نے افغانستان کا دورہ کر کے افغان حکام کو ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے۔

دوسری جانب جنرل پیٹر نے کہا کہ دنیا مسئلہ کشمیر سے الگ نہیں رہ سکتی۔ان کا کہنا تھا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاک فوج کا کردار قابل ستائش ہے جنہوں نے اس جنگ میں بہت کامیابیاں حاصل کی ہیں۔

نیٹو ملٹری کمیٹی کے چیئر مین کا کہنا تھا کہ پاکستان نیٹو کا روایتی اتحادی اور اہم ملک ہے۔جنرل پیٹر نے مسلح افواج کے سربراہوں سے ملاقاتوں پر بھی اطمینان کا اظہار کیا۔

واضح رہے نیٹو ملٹری کمیٹی کے چیئر مین جنرل پیٹر نے گزشتہ دور روز میں چیئر مین جوائنٹ چیف آف اسٹاف کمیٹی جنرل راشد محمود اور آرمی چیف جنرل راحیل شریف سے بھی ملاقاتیں کی تھی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں