The news is by your side.

Advertisement

اوبر پر 1 ارب 2 کروڑ یورو ہرجانے کا مقدمہ

لندن: برطانیہ کے ٹیکسی ڈرائیورز نے روزگار کم ہونے کے بعد اوبر کمپنی پر 1 ارب 2 کروڑ یورو ہرجانے کا مقدمہ درج کردیا۔

برطانوی میڈیا کے مطابق لندن کی سڑکوں پر کالی ٹیکسی چلانے والے ڈرائیورز نےآئن لائن ٹرانسپورٹ کمپنی اوبر کے لائسنس میں 15 ماہ کی توسیع ہونے اور اُسے سڑکوں پر لانے کی اجازت کے بعد مقدمہ دائر کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

ٹیکسی ڈرائیورز کے لیے کام کرنے والی انجمن (ایل ٹی ڈی اے) کی جانب سے درخواست دائر کی گئی جس میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ ’آن لائن سروس آنے کے بعد سے ہمارے 11 ہزار ممبران کی آمدنی بری طریقے سے متاثر ہوئی اور اُن کے مستقبل کو شدید خطرات لاحق ہیں‘۔

ذرائع کے مطابق مقدمے کی سماعت کے دوران 25 ہزار سے زائد ایسے ڈرائیورز اپنا مؤقف پیش کریں گے جن کی آمدنی اوبر کیوجہ سے گھٹ کر گزشتہ پانچ برسوں میں 10 ہزار یورو سے بھی کم رہ گئی۔

مزید پڑھیں: برطانیہ: پاکستانی ڈرائیور نے اوبر کے خلاف مقدمہ جیت لیا

درخواست میں لکھا گیا ہے کہ ’اوبر کی وجہ سے جن ڈرائیورز کو نقصان ہوا اُن کا ہرجانہ جرمانے کی رقم سے ادا کیا جائے‘۔

ایسوسی ایشن اس بات پر پرامید ہے کہ وہ اوبر کے خلاف دائر مقدمہ جیتیں گے اور عام ڈرائیورز کو ہونے والے نقصان کا ازالہ بھی یقینی طور پر کیا جائے گا۔

خیال رہے کہ آن لائن ٹیکسی سروس فراہم کرنے والی کمپنی اوبر نے پانچ برس قبل لندن میں اپنی سروس متعارف کروائی تھی جو عوام میں بہت مقبول ہوئی بعد ازاں اس کا دائرہ کار بڑھا اور دیگر ممالک میں بھی صارفین نے استفادہ  کیا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں