The news is by your side.

Advertisement

آن لائن ٹیکسی چلانے والے دو سالہ بچی کے باپ کا قتل

لاہور: نامعلوم افراد نے لاہور میں نوجوان آن لائن ٹیکسی ڈرائیور کو قتل کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق لاہور میں آن لائن ٹیکسی چلانے والے 26 سالہ علی کو نامعلوم افراد نے جان سے مار دیا، علی دو سالہ بچی کا باپ تھا۔

رپورٹ کے مطابق علی کی تین سال قبل شادی ہوئی تھی، اس کی دو سال کی بچی بھی ہے، بھوگیوال کا رہائشی علی آن لائن ٹیکسی چلانے کے لیے گھر سے نکلا تھا، لیکن واپس نہ آیا۔

مقتول کے پریشان حال والد نے تھانہ شالیمار میں اغوا کا پرچا درج کرایا تھا، لیکن آج لاہور کے علاقے ساندہ سے اس کی لاش مل گئی، مقتول کے غم سے نڈھال سسر کا کہنا ہے کہ علی کی تین سال قبل میری بیٹی سے شادی ہوئی، ملزموں نے ہماری زندگی کا آسرا چھین لیا۔

پولیس کے مطابق لاش پوسٹ مارٹم کے بعد ورثا کے حوالے کر دی گئی ہے، قتل کے حوالے سے تفتیش جاری ہے، حکام کا کہنا تھا کہ جلد ملزم کو گرفتار کر لیں گے-

شیخ رشید کا وعدہ پورا نہیں ہوا، اسامہ ستی کے والد نے نا امیدی کا اظہار کر دیا

واضح رہے کہ آن لائن ٹیکسی سروس چلانے والے ایک اور نوجوان ڈرائیور کی اسلام آباد میں پولیس اہل کاروں کے ہاتھوں افسوس ناک قتل کا معاملہ بھی ان دنوں شہ سرخیوں میں ہے۔

21 سالہ اسامہ ستی کو 2 جنوری کو اسلام آباد جی ٹین میں اے ٹی ایس اہل کاروں نے فائرنگ کر کے جان سے مار دیا تھا، پولیس نے دعویٰ کیا کہ کار سوار کو روکا گیا تھا لیکن وہ کار بھگا کر لے گیا جس کے بعد گاڑی پر فائرنگ کی گئی لیکن ڈرائیور کو بھی گولیاں لگ گئیں۔ تاہم مقتول کے والد نے اس دعوے کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ ان کے بیٹے کو گاڑی سے اتار کر سامنے سے گولیاں ماری گئیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں