The news is by your side.

Advertisement

یومیہ تیل کی پیداوار کتنی ہوگی؟ اوپیک کا اہم اجلاس

ویانا: خام تیل پیدا کرنے والے بڑے ممالک کی تنظیم ’اوپیک پلس‘ کا یومیہ تیل کی پیداوار سے متعلق اہم اجلاس آسٹریا کے دارالحکومت میں جاری ہے۔

تفصیلات کے مطابق اوپیک پلس کے اس اجلاس میں فیصلہ کیا جائے گا کہ موجودہ حالات اور ضروریات کے پیش نظر یومیہ تیل کی پیداوار کتنی رکھنی ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اوپیک پر ڈباؤ ڈالا ہے کہ وہ تیل کی پیداوار میں اضافہ کریں تاکہ عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں بھی کم کی جاسکیں۔

خام تیل کی پیداوار کی حد سے متعلق ’اوپیک پلس‘ کا اجلاس آسٹریا کے دارالحکومت ویانا میں ہو رہا ہے، اجلاس کے اختتام پر اہم فیصلے متوقع ہیں۔

خیال رہے کہ اس گروپ میں اوپیک تنظیم کے چودہ ممالک کے ساتھ ساتھ دس دیگر تیل پیدا کرنے والے ممالک بھی شامل ہیں، اسی لیے اسے اوپیک پلس کہا جاتا ہے۔

قبل ازیں ان ممالک نے دسمبر 2018 میں فیصلہ کیا تھا کہ وہ تیل کی پیداوار اکتوبر 2018 کے مقابلے میں یومیہ ایک اعشاریہ دو ملین بیرل کم کریں گے۔

عالمی منڈی میں تیل کی قیمتیں کم کی جائیں، امریکی صدر کا اوپیک سے مطالبہ

ایک رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں یومیہ تقریبا ننانوے ملین بیرل خام تیل پیدا کیا جاتا ہے جبکہ طلب ایک سو اعشاریہ چار ملین بیرل کی ہے۔

علاوہ ازیں اوپیک کے تمام رکن ممالک نے رواں سال کے اختتام تک تیل کی پیدوارا بڑھانے کے لیے ایک سمجھوتہ کیا تھا تاہم اس میں مزید توسیع کے لیے کوئی اقدام نہیں کیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں