The news is by your side.

Advertisement

اوپن بیلٹ آرڈیننس، کیا حکومت سپریم کورٹ پر دباؤ ڈالنا چاہتی ہے؟ بلاول کا سوال

اسلام آباد: پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے سوال اٹھایا ہے کہ اوپن بیلٹ کے سلسلے میں ریفرنس عدالت میں تھا، حکومت اسے اسمبلی میں لے آئی، کیا حکومت سپریم کورٹ پر دباؤ ڈالنا چاہتی ہے؟

تفصیلات کے مطابق آج اسلام آباد میں زرداری ہاؤس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے بلاول نے کہا کہ حکومت آرڈیننس نکال کر اوپن بیلٹ سینیٹ الیکشن کرانا چاہتی ہے، یہ اپنے ارکان اسمبلی پر عدم اعتماد کا مظہر ہے۔

انھوں نے کہا حکومت کو آرڈیننس لانے پر سنجیدگی کا مظاہرہ کرنا چاہیے تھا، حکومت کو بات چیت کرنی چاہیے تھی، فیصلے پر اتفاق رائے پیدا کرنا چاہیے تھا، لیکن حکومت نے اس معاملے پر جمہوری طریقہ نہیں اپنایا، اور سپریم کورٹ کو متنازع بنانے کا قدم اٹھایا۔

پی پی چیئرمین کا کہنا تھا ریفرنس عدالت میں تھا اور پھر بھی حکومت اسے اسمبلی میں لے آئی، اسمبلی میں بھی کسی کو بات کرنے نہیں دی گئی، اس اقدام کا مطلب کیا ہے؟ کیا حکومت سپریم کورٹ پر دباؤ ڈالنا چاہتی ہے؟ پی ٹی آئی حکومت سینیٹ الیکشن کو متنازع بنانے کی کوشش کر رہی ہے۔

وفاقی کابینہ: سینیٹ الیکشن اوپن بیلٹ سےکرانے کے لیے آرڈیننس کی منظوری

بلاول بھٹو نے کہا حکومت چاہتی ہے کہ سینیٹ الیکشن سے قبل ہر حربہ استعمال کر کے 2018 کے انتخابات کی طرح اداروں کو متنازع بنا کر سینیٹ الیکشن میں بھی دھاندلی کی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں