The news is by your side.

Advertisement

اپوزیشن نے نیب ترمیمی کمیٹی کا بائیکاٹ کر دیا

اسلام آباد: حکومت اور اپوزیشن کے درمیان نیب ترامیم پر ڈیڈ لاک برقرار ہے، حکومت نےاپوزیشن کی نیب ترامیم مسترد کر دیں جس پر اپوزیشن نے احتجاجاً ترمیمی کمیٹی کا بائیکاٹ کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق نیب ترامیم کمیٹی سے بائیکاٹ کے بعد مسلم لیگ ن کے رہنما شاہدخاقان عباسی نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ اب مذاکرات نہیں ہوں گے حکومت بدنیتی سے کام کر رہی ہے جب حکومت بل لائے گی ہم اس پربات کریں گے۔

شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ پچھلے ہفتےحکومت نے کہا 4 بل قومی اسمبلی اور سینیٹ سے مشترکہ پاس کرنا چاہتے ہیں ایک بل یو این اور دوسرا نیب آرڈیننس سےمتعلق تھا ہم نےکہاکہ قومی مفادپربل ہیں تو ہم تیارہیں پھر معاملےپرکمیٹی بھی بنائی، گئی۔

ان کا کہنا تھا کہ چاروں بلوں کو انتہائی سنجیدگی سےلیاگیا جب کہ انسداددہشت گردی ایکٹ پر ایک بل بہت خطرناک تھا ہم نےکہاکہ اگریہ بل پاس ہوا تو پاکستان کیلئےبڑاخطرناک ہوگا اس بل کو ہم نےود ڈرا کر دیا لیکن یو این سیکیورٹی کونسل بل کوقبول کرلیا۔

سابق وزیراعظم کا کہنا تھا کہ حکومت نےاپوزیشن کی نیب ترامیم مسترد کر دیں جس پر اپوزیشن نے احتجاجاً ترمیمی کمیٹی کا بائیکاٹ کر دیا جب حکومت بل لائے گی ہم اس پربات کریں گے کیونکہ جب بھی قومی مفاد کی بات ہوگی اپوزیشن بات چیت کرے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں