سینیٹ میں بھی گو نواز گو کے نعرے -
The news is by your side.

Advertisement

سینیٹ میں بھی گو نواز گو کے نعرے

اسلام آباد: اپوزیشن جماعتوں کے بعد ارکان نے سینیٹ میں بھی وزیر اعظم کے استعفے کا مطالبہ کردیا۔ ارکان ’گو نواز گو‘ اور ’وزیر اعظم استعفیٰ دو‘ کے نعرے لگاتے رہے۔

پاناما کیس کے فیصلے کے بعد اپوزیشن جماعتوں نے حکومت کو ٹف ٹائم دینے کا اعلان کردیا۔ اپوزیشن جماعتوں نے قومی اسمبلی کے بعد سینیٹ میں بھی وزیر اعظم نواز شریف کے استعفے کا مطالبہ کیا۔

سینیٹ میں ارکان نے ’گو نواز گو‘ اور ’وزیر اعظم استعفیٰ دو‘ کے نعرے لگائے۔

اجلاس میں اپوزیشن ارکان نے کھڑے ہو کر احتجاج کیا۔ اپوزیشن کے گو نواز گو کے نعروں اور شور شرابے کی وجہ سے کان پڑی آواز سنائی نہیں دے رہی تھی۔

چیئرمین سینیٹ رضا ربانی کی جانب سے مسلسل اراکین کو بیٹھنے کی ہدایات کی جاتی رہی۔ چئیرمین کا کہنا تھا کہ ایوان کی روایت خراب نہ کریں۔

اپوزیشن کے احتجاج کے باعث سینیٹ کا اجلاس غیر معینہ مدت تک کے لیے ملتوی کردیا گیا۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز سپریم کورٹ آف پاکستان نے پاناما کیس پر فیصلہ سنا دیا جس میں عدالت نے جوائنٹ انویسٹی گیشن کمیٹی بنانے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ جے آئی ٹی ہر 15 روز بعد رپورٹ پیش کرے۔

عدالت نے حکم دیا تھا کہ وزیر اعظم ،حسن اور حسین نواز جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوں گے اور جے آئی ٹی 60 روز میں اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔

مزید پڑھیں: مبارک وزیر اعظم نواز شریف

سپریم کورٹ نے اپنے فیصلے میں کہا تھا کہ وزیر اعظم کی اہلیت کا فیصلہ جے آئی ٹی رپورٹ پر ہوگا۔ جے آئی ٹی میں آئی ایس آئی، نیب کا نمائندہ، سیکیورٹی ایکس چینج اور ایف آئی اے کا نمائندہ بھی شامل ہوگا۔

فیصلے کے بعد تمام اپوزیشن جماعتوں نے وزیر اعظم سے استعفے کا مطالبہ کردیا۔

دوسری جانب تحریک انصاف نے پاناما کیس کا فیصلہ آنے کے بعد آج یوم نجات اور یوم تشکر منانے کا فیصلہ کیا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں