The news is by your side.

Advertisement

حکومت کےآخری سال میں آمریت کی جھلک دکھائی دے رہی ہے، خورشید شاہ

اسلام آباد : اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے کہا ہے کہ حکومت کے آخری سال میں آمریت کی جھلک دکھائی دے رہی ہے اور اگر حکومت کا یہی رویہ رہا تو آپ کے اس بجٹ کو کوئی نہیں مانے گا۔

قائد حزب اختلاف خورشید شاہ قومی اسمبلی میں خطاب کررہے تھے انہوں نے کہا کہ ہم نے اس جمہوریت کو خون دے کرپالا ہے۔

قائد حزب اختلاف نے بجٹ بحث کا آغاز اپوزیشن رکن کے بجائے حکومتی رکن سے کرانے پر اسپیکر قومی اسمبلی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ حکومتی رکن سے بجٹ پر بحث شروع کرا کراسپیکر نے نئی روایت ڈالی جو کہ آئین کے برخلاف ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہمیں معلوم ہے یہ فیصلہ اسپیکر کا اپنا نہیں تھا، حکومت نے اسپیکر قومی اسمبلی کو متنازع بنا دیا ہے اور جناب اسپیکر! آپ کو بھی سوچنا چاہیئے کہ کل تاریخ آپ کو کس نام سے یار رکھے گی؟


اسحاق ڈار نے مریم اورنگزیب کو بچی کہہ دیا، اراکین کا اعتراض


خورشید شاہ نے کہا کہ پیپلزپارٹی جارحانہ جماعت نہیں اور پاکستان تحریک انصاف کو بھی ہم ہی منا کراسمبلی میں لائے تھے کیوں کہ جمہوریت کی حفاظت کے لیے ہماری قربانیاں ہیں۔

اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ 5 سال حکومت کرنا آپ کا حق ہے لیکن ہمارے ہاتھ پاؤں باندھنے سے حقیقت نہیں چھپے گی اور

آج کل وہ دور نہیں رہا جب شیرکو دیکھ کر کبوترآنکھیں بند کر دے۔

خیال رہے گزشتہ روز قائد حزب اختلاف سید خورشید شاہ نے اپنی بجٹ تقریر کو براہ راست سرکاری ٹی وی پر پیش نہ کرنے پر سخت احتجاج کیا تھا اور اسمبلی سے واک آؤٹ بھی کیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں