The news is by your side.

Advertisement

اپوزیشن نے قومی اسمبلی میں وزیراعظم کی تقریر میں احتجاج نہ کرنے کیلیے شرط رکھ دی

اسلام آباد : اپوزیشن نے قومی اسمبلی وزیراعظم عمران خان کی تقریر میں احتجاج نہ کرنے کے لیے شرط رکھ دی اور کہا وزیراعظم نے بے جا تنقید کا نشانہ بنایا تو خاموش نہیں رہیں گے۔

تفصیلات کے مطابق اپوزیشن کی جانب سے قومی اسمبلی میں وزیراعظم کو تقریر نہ کرنے دینے کی دھمکیوں کے معاملے پر اسپیکر اسد قیصر سے اپوزیشن رہنماؤں کی ملاقات ہوئی ، ملاقات میں رانا تنویر،پرویز اشرف،شازیہ مری ایاز صادق و دیگر شریک ہوئے۔

اپوزیشن نے وزیراعظم کی تقریر میں احتجاج نہ کرنے کےلیےشرط رکھ دی، اسپیکر نے درخواست کی کہ وزیراعظم کی تقریر کےدوران شورنہ کریں سکون سےتقریر سنیں، جس پر اپوزیشن نے جواب میں کہا کہ انحصار وزیراعظم کی تقریر اور رویے پر ہے ، وزیراعظم نے بے جا تنقید کا نشانہ بنایا تو خاموش نہیں رہیں گے۔

اسپیکر قومی اسمبلی نے یقین دہانی کرائی کہ ایسا نہیں ہوگا، اپوزیشن نے مطالبہ کیا کہ افغانستان پر ان کیمرہ اجلاس میں اصل صورتحال بتائی جائے، جس پر  اسپیکر قومی اسمبلی کا کہنا تھا کہ ہم قومی مفادات سےمتعلق ایک پیج پر ہیں۔

یاد رہے اپوزیشن کی جانب سے وزیراعظم کو تقریر نہ کرنے دینے کی دھمکیاں دی گئیں ، بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ مجھےبولنےنہ دیاتوعمران خان آئیں دیکھتاہوں کیسے تقریر کرتے ہیں جبکہ مسلم لیگ ن کے رہنما شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ اپوزیشن لیڈر تقریرنہیں کر سکتا تو شائد لیڈرآف دی ہاؤس بھی نہ کرسکے۔

بعد ازاں شاہ محمود قریشی نے بلاول بھٹو زرداری اور شاہد خاقان عباسی کو دوٹوک جواب دیتے ہوئے کہا کہ اگر ایوان میں وزیراعظم کو بولنے نہ دیا گیا تو نہ بلاول بولے گا نہ شہباز۔

Comments

یہ بھی پڑھیں