The news is by your side.

Advertisement

اپوزیشن ایمنسٹی اسکیم کے خلاف متحد، سعودیہ ایران تعلقات پرپالیسی بیان کا مطالبہ

اسلام آباد: قائدِ حزب اختلاف خورشید شاہ کی زیرِصدارت اپوزیشن جماعتوں کے رہنماوٗں کا اجلاس منعقد ہوا جس میں ایمنسٹی اسکیم کی مخالفت کرنے اورحکومت کو ایران اورسعودی عرب کے مابین بگڑتے تعلقات پرپالیسی بیان دینے پرمجبورکرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق خورشید شاہ نے آج وفاقی دارالحکومت میں ایک اجلاس کی صدارت کی جس میں تحریک انصاف، جماعت اسلامی اور متحدہ قومی موومنٹ کے ارکانِ اسمبلی شریک ہوئے۔

اجلاس میں متفقہ طورپرفیصلہ کیا گیا کہ حکومت کی جانب سے ٹیکس نادہندگان کوفرارکا راستہ فراہم کرنے والی ایمنسٹی اسکیم کی بھرپوراندازمیں مخالفت کی جائے گی۔

شرکاء کا کہنا تھا کہ ایمنسٹی اسکیم کو کسی بھی صورت قبول نہیں کریں گے۔

خورشید شاہ نے اجلاس کے دوران سوال اٹھایا کہ اس سے پہلے بھی پانچ باریہ اسکیم متعارف کرائی گئی بتایا جائے کہ کتنی رقم اکھٹا کی گئی؟۔

اجلاس میں سعودی عرب میں شیعہ عالم دین شیخ نمرالنمر کی سزائے موت کے بعد ایران اورسعودی عرب کے بگڑتے ہوئے تعلقات پر تشویش کا اظہارکیا گیا اورفیصلہ کیا گیا حکومت سے اس معاملے پر پالیسی بیان دینے کا مطالبہ کیا جائے۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ حکومت کو مجبور کیا جائے گا کہ مشیرِخارجہ سرتاج عزیزاس معاملے پرپارلیمنٹ کو بریفنگ دیں۔

اجلاس میں تحریک انصاف کے شاہ محمود قریشی، اسد عمراورشیریں مزاری، ایم کیوایم کے رشید گوڈیل سمیت متعدد سیاسی رہنما شریک ہوئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں