اورنگی ٹاؤن : ڈکیتیوں کیخلاف احتجاج، پولیس تشدد سے کئی زخمی، متعددگرفتار -
The news is by your side.

Advertisement

اورنگی ٹاؤن : ڈکیتیوں کیخلاف احتجاج، پولیس تشدد سے کئی زخمی، متعددگرفتار

کراچی : اورنگی ٹاؤن کا اسلام چوک میدان جنگ بن گیا، علاقہ مکین جرائم کی بڑھتی ہوئی وارداتوں کیخلاف سڑکوں پر نکل آئے، پولیس کی جانب سے ہوائی فائرنگ اور شیلنگ کے باعث یہ احتجاج پولیس اورعوام کے درمیان جھگڑے کی صورت اختیار کرگیا۔

تفصیلات کے مطابق اورنگی ٹاؤن کے مکینوں نے علاقے میں چوری اور ڈکیتیوں کی پے درپے وارداتوں سے پریشان ہوکر اسلام چوک پر پولیس کیخلاف احتجاجی مظاہرہ کیا، اس دوران مظاہرین نے پولیس کیخلاف شدید نعرے بازی کی، دیکھتے ہی دیکھتے احتجاج پر تشدد ہوگیا۔

کالی وردی والے کراچی میں ڈکیتیاں روکنے میں تو ناکام ہیں ہی مگر روز روز کی وارداتوں سے تنگ شہری سڑکوں پر آئے تو الٹا انہی پر شیلنگ کی گئی، مشتعل افراد کو منتشر کرنے کیلئے پولیس نے لاٹھی چارج اور شیلنگ کی جس سے کئی افراد زخمی ہوگئے، زخمی افراد کو عباسی شہید اسپتال منتقل کردیا گیاہے۔

بعد ازاں صورتحال اورپیچیدہ ہوگئی، مظاہرین نے پولیس پر پتھراؤ بھی کیا۔ پولیس کے مطابق ہوائی فائرنگ اورشیلنگ مظاہرین کی پولیس وین پر پتھراؤ کے بعد کی گئی۔ مظاہرے میں پولیس کی دو گاڑیوں کو نقصان پہنچا۔

مشتعل مظاہرین نے مذاکرات کے لیے آنے والے ایس ایس پی ویسٹ ناصرآفتاب کی گاڑی کے شیشے توڑ دیئے۔ پولیس نے مظاہرین کے منتشر ہوتے ہی  دس سے زائد افراد کو گرفتار کر لیا، جس کے بعد مظاہرین نے ایک بار پھر گرفتاریوں کے خلاف احتجاج شروع کر دیا۔

رینجرز کی بھاری نفری بھی علاقے میں پہنچ کر پوزیشن سنبھال لی۔ ایس ایس پی ویسٹ کا اسموقع پرکہنا تھا کہ پولیس کو ڈکیتیوں کے مسئلے پر کوئی درخواست نہیں دی گئی لوگوں نے اچانک جمع ہوکر احتجاج شروع کر دیا جس پر کارروائی کی گئی۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں