عمر متین کے بارے میں ایف بی آئی کو پیشگی اطلاع دی تھی، اسلحہ ڈیلر کا انکشاف -
The news is by your side.

Advertisement

عمر متین کے بارے میں ایف بی آئی کو پیشگی اطلاع دی تھی، اسلحہ ڈیلر کا انکشاف

فلوریڈا: اورلینڈو کے ایک اسلحہ ڈیلر نے انکشاف کیا ہے کہ انہوں نے حملہ آور عمر متین کے بارے میں ایف بی آئی کو پیشگی اطلاع دی تھی تاہم ایف بی آئی حملہ آور کو روکنے میں ناکام رہی۔

امریکی ریاست فلوریڈا کے شہر اورلینڈومیں امریکی تاریخ کے بدترین قتل و غارت واقعے میں معروف تحقیقاتی ادارے ایف بی آئی کی مبینہ غفلت سامنے آئی ہے، میڈیا رپورٹس کے مطابق حملہ آور عمر متین گزشتہ چار سال سے ایف بی آئی کے ریڈار پر تھا جبکہ 2013 اور 2014 میں مشکوک سرگرمیوں پر اس سے پوچھ گچھ بھی کی گئی ۔

OMAR POST

جینسن بیچ میں اسلحہ اسٹور کے مالک رابرٹ ایبل کا کہنا ہے کہ حملہ آور نے اورلینڈو واقعے سے قبل ان کے اسٹور سے ایک حفاظتی جیکٹ اور گولیوں کے ایک ہزار راؤنڈز خریدنے کی کوشش کی، جس کی اطلاع فوری طور پر ایف بی آئی کو دی گئی۔

اسلحہ ڈیلر رابرٹ ایبل کے مطابق وہ گاہک کا نام نہیں جانتے تھے تاہم انہیں وہ شخص مشکوک لگا، جس پرانہوں نے ایف بی آئی کو اطلاع دی، اسٹور کے پاس اپنے گاہک کی فوٹیج بھی موجود تھی تاہم ایف بی آئی نے اسٹور کا دورہ کرنے تک کی زحمت نہ کی۔

OMAR POST 1

اورلینڈو حملے کے بعد جب حملہ آور کی تصویر میڈیا پر آئی تو اسلحہ ڈیلر نے فوری طور پر اسے پہچان لیا، ایف بی آئی نے اس معاملے پر موقف دینے سے انکار کر دیا ہے تاہم امریکی میڈیا اس غفلت پر تحقیقاتی ادارے کی کارکردگی اور ہوشیاری پر درجنوں سوالات اٹھا رہا ہے۔

یاد رہے کہ حملہ آور عمرمتین نے اورلینڈو میں ہم جنس پرستوں کے نائٹ کلب میں گھس کر فائرنگ کرکے 50 افراد کو ہلاک کردیا تھا جبکہ عمر متین بھی مارا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں