The news is by your side.

Advertisement

گیارہ بیماریوں میں مبتلا افراد کے لیے کرونا وائرس جان لیوا قرار

نیویارک: امریکا کے ماہرین نے  کرونا کے ممکنہ پھیلاؤ اور اثرات کی تجزیاتی رپورٹ شائع کردی جس میں بتایا گیا ہے کہ گیارہ امراض میں مبتلا افراد کے لیے کرونا وائرس شدید یا موت کی وجہ ثابت ہوسکتا ہے۔

لانس گلوبل ہیلتھ کے ماہرین  نے کرونا کے حوالے سے تحقیق کی جس کے نتائج نیویارک ٹائمز میں شائع کی گئی ہے۔ رپورٹ میں ماہرین نے کہا ہے کہ ’دنیا کی تمام آبادی کرونا کا شکار ہوئی تو ساڑھے تین کروڑ مریضوں کو اسپتالوں میں داخل کرنے کی ضرورت پیش آسکتی ہے‘۔

ماہرین کے مطابق دنیاکی 22فیصد آبادی کے کرونا وائرس کے شدید مرض میں مبتلا ہونے کا خطرہ ہے، ہر پانچ میں سے ایک شخص کرونا وائرس سے متاثر ہوسکتا ہے مگر یہ ضروری نہیں کہ جو لوگ کرونا میں مبتلا ہوں اُن کی حالت تشویشناک ہو یا تمام کی موت کا خطرہ ہو‘۔

ماہرین نے تحقیق کی بنیاد پر مرتب کی جانے والی رپورٹ میں گیارہ امراض یا کیفیات کے حامل افراد کا احاطہ کیا اور پھر اُن کی درجہ بندی بھی کی۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ’ان گیارہ امراض میں مبتلا افراد کو کرونا کی علامات انتہائی سنگین اور شدید ہوسکتی ہیں، بقیہ افراد کو ضروری نہیں ہے کہ علامات بھی ظاہر ہوں‘۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ’دنیا کےایک ارب 70کروڑ افراد پہلے ذیابیطس ، دل اور پھیپھڑوں کو متاثر کرنے والے امراض میں مبتلا ہیں، ایسے تمام مریضوں کے لیے کرونا جان لیوا ثابت ہوسکتا ہے‘۔

گیارہ بیماریاں

ماہرین کے مطابق دمے، گردوں کی دائمی بیماری (جس کا علاج ڈائیلیسس سے کیا جارہا ہو)

پھیپھڑوں کی دائمی بیماری

ذیابیطس

ہیموگلوبن کی خرابی

مدافعتی نظام میں کمزوری

جگر کی بیماری

65 سال یا اس سے زیادہ عمر کے افراد

نرسنگ ہومز یا طویل مدتی نگہداشت کی سہولیات میں رہنے والے افراد

دل کی سنگین صورتحال (شریانیں بند، بائی پاس یا دو سے زیادہ اٹیک والے)

شدید موٹاپے کا شکار افراد

Comments

یہ بھی پڑھیں