سپریم کورٹ نے ن لیگی رہنما سعدیہ عباسی اور ہارون اختر کی سینیٹ رکنیت کالعدم قرار دے دی
The news is by your side.

Advertisement

سپریم کورٹ نے ن لیگی رہنما سعدیہ عباسی اور ہارون اختر کی سینیٹ رکنیت کالعدم قرار دے دی

اسلام آباد: ن لیگی رہنما سعدیہ عباسی اور ہارون اختر کی سینیٹ رکنیت کالعدم قرار دے دی گئی.

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے دونوں رہنماؤں کی رکنیت کالعدم قرار دیتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ سعدیہ عباسی اور ہارون اختر  کاغذات جمع کراتے وقت دہری شہریت کے حامل تھے.

چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ دونوں کو دہری شہریت پرسینیٹ کی رکنیت سے نااہل قراردیا جاتا ہے.

سپریم کورٹ کی جانب سے الیکشن کمیشن کو دونوں رہنماؤں کی رکنیت منسوخ کرنے کا حکم جاری کر دیا.

اس کیس کی سماعت سپریم کورٹ کے7 رکنی بینچ نے کی، جس کی سربراہی چیف جسٹس آف پاکستان کر رہے تھے.


مزید پڑھیں:ؒ حکومت نے ضمنی الیکشن پر اثر انداز ہونے کیلئے مداخلت نہیں کی، وزیر اعظم عمران خان


دونوں رہنماؤں کا تعلق مسلم لیگ ن سے ہے. عدالتی حکم کے مطابق دونوں نشستوں پر دوبارہ الیکشن کروایا جائے گا۔

واضح رہے کہ ہارون اختر پی ٹی آئی رہنما اور معروف کاروباری شخصیت ہمایوں‌ اختر کے بھائی ہے.

ہمایوں‌اختر نے ضمنی الیکشن میں عمران خان کی چھوڑی ہوئی نشست پر پی ٹی آئی کے ٹکٹ پر الیکشن لڑا تھا. الیکشن میں‌ انھیں خواجہ سعد رفیق کے ہاتھوں شکست ہوئی.

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں