The news is by your side.

Advertisement

ایم کیو ایم اردو بولنے والوں کی نمائندگی نہیں کرتی،اویس شاہ نورانی

کراچی : جمعیت علمائے پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل اویس نورانی نے کہا ہے کہ بھارت اور اسرائیل کے پروردہ لوگوں کو مزید وقت دینا بھی ملک و قوم کے ساتھ غداری ہوگی۔

وہ برنس روڈ تا کراچی پریس کلب تک نکالے جانے والے’’پاکستان زندہ باد مارچ‘‘ سے خطاب کررہے تھے انہوں نے مزید کہا کہ ایم کیوایم اردو بولنے والوں کی اکثریت کی نمائندگی نہیں کرتی ہے، کراچی کے شہری بانیان پاکستان کی اولادیں ہیں، وہ کیسے دہشت گردی ، قتل وغارت گری، بھتہ خوری اور سے بڑھ کر پیارے وطن کو توڑنے اوراسے گالیاں دینے والوں کی حمایت کرسکتی ہے؟

اس موقع پر محمد اویس نورانی نے ریاستِ پاکستان سے پُروزمطالبہ کیا کہ حکومت سیاسی مصلحتوں اور بیرونی دباؤ سے بالاتر ہو کر بلاتاخیر قائد متحدہ پرغداری کا مقدمہ چلائے اور ایم کیو ایم پر پابندی لگا کر اُس کی سیاسی سرگرمیاں معطل کریں۔

ریلی سے خطاب کے دوران انہوں نے حکومت کو تنبیہ کی کہ فیصلوں کے لئے حالات سازگارہوں تو موقع گنوانا تاریخ کی سنگین غلطی شمار ہوتی ہے اور لگتا یہ کہ موجودہ حکومت نے بھی سنگین غلطیاں کرنا وطیرہ بنالیا ہے۔

آخرمیں علامہ اویس نورانی انہوں نے کہا کہ حکمرانوں کو سمجھنا ہوگا کہ ملک دشمنوں کے خلاف یہ فقط جذبات نہیں بلکہ پاکستان کی سالمیت اور مسئلہ کشمیر پر پاکستان کی کوششوں کو رائیگاں جانے سے بچانے کے لئے وقت کا تقاضہ ہے کہ غداران وطن اور ان کے پیروکاروں کو پاکستان سے محبت کرنے والوں کی ترجمانی کرتے ہوئے سخت ترین سزا دی جائے۔

واضح رہے اویس شاہ نوارانی کراچی کے معروف عالم دین، سیاستدان اور سابق رکن قومی اسمبلی علامہ شاہ احمد نورانی کے بڑے صاحبزادے اور اپنے والد صاحب کی جماعت کے سربراہ بھی ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں