The news is by your side.

Advertisement

اب پھلوں اور سبزیوں کی نئے طریقے سے پیکنگ کی جائے گی

پیرس : ماحول کو آلودگی اور کثافت سے پاک کرنے کیلیے فرانس کی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ روز مرہ کے امور میں پلاسٹک کی تھیلیوں کا استعمال ختم کیا جائے گا۔

اس حوالے سے فرانس کی وزارت ماحولیات نے کہا ہے کہ فرانس پلاسٹک کے فضلے کو کم کرنے کے لیے جنوری 2022 سے تقریباً تمام پھلوں اور سبزیوں کے لیے پلاسٹک کی پیکیجنگ پر پابندی عائد کردے گا۔

امریکی نیوز چینل سی این این کے مطابق وزارت ماحولیات نے پیر کو حکموت کے اس فیصلے سے آگاہ کیا ہے۔ فروری 2020 کے قانون کو نافذ کرتے ہوئے فرانس کی حکومت نے تقریباً 30 پھلوں اور سبزیوں کی فہرست شائع کی جنہیں یکم جنوری سے پلاسٹک کی پیکنگ کے بغیر فروخت کرنا تھا۔

وزارت نے ایک بیان میں کہا کہ ’ہم اپنی روزمرہ کی زندگیوں میں ایک بار استعمال کے قابل پلاسٹک کی ایک بھاری مقدار استعمال کرتے ہیں۔

’سرکلر اکانومی قانون‘ کا مقصد ’تھرو اوے پلاسٹک‘ کے استعمال کو کم کرنا اور اس کے متبادل کو دیگر مواد یا دوبارہ استعمال کے قابل اور ری سائیکل پیکیجنگ کے ذریعے بڑھانا ہے۔

اندازہ لگایا گیا ہے کہ فرانس میں37 فیصد پھل اور سبزیاں پیکیجنگ کے ساتھ فروخت ہوتی ہیں اور توقع ہے کہ حکومت کے اس اقدام سے ہر سال ایک ارب سے زائد بیکار پلاسٹک کی پیکیجنگ کو روکا جا سکے گا۔

فرانس میں پھل بیچنے والی فیڈریشن کے صدر فرانکوئس روچ نے کہا کہ اتنے کم وقت میں گتے(کی پیکیجنگ) کی طرف منتقل ہونا مشکل ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ ’اس کے علاوہ اس نرم پیداوار کو بیچنا پیچیدہ عمل ہے کیونکہ بہت سے گاہک پھلوں کو چھونے لگتے ہیں اور لوگ نہیں چاہتے کہ ان کے پھل کو دوسرے گاہکوں کے ہاتھ لگیں۔

خیال رہے کہ پلاسٹک پیکیجنگ پر پابندی پلاسٹک کو ختم کرنے کے طویل المدتی حکومتی پروگرام کا حصہ ہے۔ 2021سے فرانس نے پلاسٹک کے سٹرا، کپ اور کٹلری کے ساتھ ساتھ اسٹائروفوم ٹیک وے باکس پر بھی پابندی عائد کردی ہے۔

دوسری جانب کٹے ہوئے پھل، محدود تعداد میں نازک پھل اور سبزیاں اب بھی پلاسٹک کی پیکیجنگ کے ساتھ فروخت کی جا سکتی ہیں لیکن جون 2026 کے آخر تک اسے مرحلہ وار ختم کر دیا جائے گا۔

چیری ٹماٹر، ہری پھلیاں اور آڑو کے لیے جون 2023 کے آخر تک پلاسٹک کی پیکیجنگ پر پابندی عائد کی جائے گی اور 2024 کے آخر تک اینڈیوز، سفیرگس، مشروم، کچھ قسم کے سلاد اور جڑی بوٹیوں کے ساتھ ساتھ چیری کی پلاسٹک پیکجنگ پر بھی پابندی عائد کی جائے گی۔

جون 2026 کے آخر میں رسبیری، سٹرابیری اور دیگر نازک بیریوں کو بغیر پلاسٹک کے فروخت کیا جائے گا۔ حکومت کے منصوبے کے مطابق 2022 سے عوامی مقامات پر پلاسٹک کی بوتلوں کے استعمال کو کم کرنے کے لیے پانی کے چشمے فراہم کرنا ہوں گے۔

پریس اور تشہیر کی اشاعتوں کو پلاسٹک ریپنگ کے بغیر بھیجنا ہو گا جبکہ فاسٹ فوڈ ریستوران گاہکوں کو اب پلاسٹک کے مفت کھلونے پیش نہیں کر سکتے۔ جنوری 2023 سے فرانس فاسٹ فوڈ ریستوران میں ڈسپوزیبل کراکری پر بھی پابندی لگائے گا جو وہاں ایک بار استعمال کے لیے دی جاتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں