The news is by your side.

Advertisement

پاک افغان سرحد پر 70کلو میٹر تک خاردار تاریں نصب،25 چیک پوسٹیں بھی ختم

چمن : پاک افغان بارڈر پرخاردار تار لگانے کا عمل تیزی سے جاری ہے، شمالی وزیرستان میں سترکلو میٹر رقبے تک باڑ لگا دی گئی ہے جبکہ شمالی وزیرستان میں25 چیک پوسٹیں بھی ختم کردی گئیں ہیں۔

تفصیلات کے مطابق افغانستان سے آنے والے دہشت گردوں کی روک تھام کیلئے پاک فوج نے اہم ترین قدم اٹھا لیا، پاک افغان بارڈر پر خاردار تار لگانے کا عمل تیزی سے جاری ہے۔

پاک فوج نے سرحد پر ستر کلومیٹر تک باڑ لگانے کا کام مکمل کرلیا ہے، اس حوالے سے شمالی وزیرستان کے جنرل آفیسر کمانڈر میجر جنرل اظہر عباسی نے بتایاہے کہ پاک افغان سرحد کو مکمل محفوظ بنائیں گے اب سرحد پار سے دہشت گرد ہماری حدود میں گھس نہیں پائیں گے۔

انہوں نے بتایا کہ اب تک پوری ایجنسی میں پچیس چیک پوسٹیں ختم کر دی گئی ہیں، اب صرف پانچ پوسٹیں رہ گئی ہیں، اس کے علاوہ سرحد کی جدید سی سی ٹی وی کیمروں سے نگرانی کی جارہی ہے اور سیکیورٹی اہلکاروں کی گاڑیوں کی آمد و رفت پر بھی کڑی نظر ہے۔

ذرائع کے مطابق سرحد پر تیئس سو چوالیس کلو میٹر طویل باڑ لگائی جائے گی جبکہ سات سو پچاس قلعے بھی تعمیر کئے جائیں گے، خاردار تار لگنے سے افغانستان سے ہونے والی سرحد پار دہشت گردی کا سدباب کیا جاسکے گا تاہم افغانستان سے ہونے والی دہشت گردی کو روکنے کے لئے افغان حکومت سے سنجیدہ اقدامات کی توقع ہے۔

یاد رہے کہ جون2017میں پاک افغان سرحد پر باڑ لگانے کا پہلا مرحلہ مکمل کرلیا گیا تھا، پہلے مرحلے میں باجوڑ، مہمند اور خیبرایجنسی میں باڑ لگائی گئیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں