The news is by your side.

Advertisement

کور کمانڈر پشاور کا پاک افغان بارڈ کا دورہ

راولپنڈی : کور کمانڈر پشاور نے پاک افغان بارڈر کا دورہ کیا اور حفاظتی انتظامات کا جائزہ لیا جب کہ دہشت گردوں کی نقل وحرکت کو روکنے اور سخت حفاظتی حصار قائم کرنے کے لیے پہلے ہی اضافی ہیوی آرٹلری نفری اگلے مورچوں پر بھجوادی گئی تھیں۔

تفصیلات کے مطابق سانحہ لاہور میں خود کش حملہ آور کے تانے بانے افغانستان سے ملنے کے بعد پاک افغان بارڈر پر سیکیورٹی سخت کردی گئی ہے جس کے لیے اضافی ہیوی آرٹلری نفری اگلے مورچوں تک پہنچا دی گئی ہے تاکہ دہشت گردوں کے داخلے کو ناممکن بنایا جائے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق کور کمانڈر پشاور لیفٹیننٹ جنرل نذیراحمد بٹ نے خیبرایجنسی کے علاقےلوئی شلمان کادورہ کیا جس کے دوران پوسٹوں پر موجود جوانوں سے ملاقاتیں کیں اور فوج کی آپریشنل تیاریوں اور جذبے پر اطمینان کا اظہار کیا جب کہ کورکمانڈر پشاور کو علاقے میں سیکیورٹی صورت حال پر بریفنگ بھی دی گئی۔

مزید پڑھیں : پاکستان نے حالیہ دہشت گردی کے تمام ثبوت افغان حکام کو فراہم کردیئے

دوسری جانب چمن میں بھی باب دوستی مسلسل چوتھے روز بند ہونے سے نیٹو سپلائی اور پاک افغان ٹرانزٹ ٹریڈ کا سلسلہ بھی روک دیا گیا ہے، سرحد کے دونوں جانب مال بردار گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ چکی ہیں اور پیدل جانے والے افراد کو بھی سرحدپار کرنے کی اجازت نہیں دی جارہی۔

یہ خبر پڑھیں : پاک فوج کی افغان سرحد پر کارروائی، جماعت الاحرار کے کئی ٹھکانے تباہ

پاکستان میں دہشتگردی کی حالیہ لہر میں افغان باشندوں کے ملوث ہونے کے بعد پاک افغان کو مکمل طور پر سِل کردیا گیا ہے اور سخت سیکیورٹی نافذ کردی گئی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : پاک فوج کی سرحد پار کارروائی، اہم کمانڈر سمیت 20 دہشتگرد ہلاک

واضح رہے پاک فوج نے سرحد پار کارروائی میں جماعت الاحرار کے ٹھکانوں پر حملہ کر کے کمین گاہوں کو تباہ اور رحمان بابا سمیت 20 سے زائد دہشت گردوں کو ہلاک کردیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں