پاک افغان سرحد طور خم پر کشیدگی، طورخم اورلنڈی کوتل میں کرفیو نافذ -
The news is by your side.

Advertisement

پاک افغان سرحد طور خم پر کشیدگی، طورخم اورلنڈی کوتل میں کرفیو نافذ

طور خم: پاک افغان سرحد طورخم پر افغان فورسز کی بلااشتعال فائرنگ سے صورتحال کشیدہ ہوگئی ہیں، افغان فورسز کی فائرنگ سے ایک پاکستانی سکیور ٹی اہلکار اور نو شہری زخمی ہوگئے جبکہ طورخم اورلنڈی کوتل میں کرفیو نافذ کردیا گیا ہے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق طور خم سرحد پر پاکستانی علاقے میں واقع گیٹ پر افغان سیکورٹی فورسز نے نو بج کر بیس منٹ پر بلا اشتعال فائرنگ شروع کردی، جس کا پاکستانی فورسز نے بھرپور جواب دیا، افغان سیکورٹی فورسز کی بلااشتعال فائرنگ اور مارٹر گولوں کے استعمال سے ایک سیکیورٹی اہلکار سمیت نو پاکستانی شہری زخمی ہوئے۔

سرحد پر کشیدہ صورتحال کے باعث طورخم کے علاقے سے لوگوں نے نقل مکانی شروع کردی ہے۔

دوسری جانب حکام نے طورخم اور لنڈی کوتل میں کرفیو نافذ کردیا ہے جبکہ پاک فضائیہ کے طیارے طور خم بارڈر کی نگرانی کررہےہیں۔

آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ گزشتہ کچھ عرصےسے دہشتگرد افغانستان سے طور خم سرحد کے ذریعے پاکستان داخل ہورہے تھے جن کی نقل و حرکت کو روکنے کی لئے سخت اقدامات کئے گئے ہیں۔

یاد رہے یکم جون سے طور خم سرحد کے ذریعے پاکستانی حدود میں بغیر سفری دستاویزات کے داخلہ مکمل طور پر بند کردیا گیا ہے، افغان بارڈر حکام نے پاکستانی حکام سے اس پابندی میں رمضان المبارک کے آخر تک نرمی کا مطالبہ کیا تھا، جسے پاکستانی حکام نے مسترد کردیا تھا، اس وقت سے دونوں فورسز کے درمیان تعلقات میں سرد مہری پائی جاتی ہے۔

دوسری جانب حکومت پاکستان کے ترجمان نے واقعے پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے واقعہ پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔ حکومتی ترجمان کا کہنا ہے کہ ایسے واقعات پاک افغان تعلقات کے لیے بہتر نہیں، افغان حکومت واقعے کی فوری اور شفاف تحقیقات کرے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں