The news is by your side.

Advertisement

چمن:پاک افغان بارڈر باب دوستی آج آٹھویں روز بھی بند

چمن : پاک افغان سرحد پر کشیدگی برقرار ہے، جس کے باعث پاک افغان بارڈر باب دوستی آج آٹھویں روز بھی سیل ہے۔

تفصیلات کے مطابق چمن میں افغان فوج کی جارحیت اور شہری آبادی پر گولہ باری کے بعد سے پاک افغان سرحد باب دوستی آج آٹھویں روز بھی بند ہے، پاک فوج بھاری توپخانے اور ٹینکوں کے ساتھ سرحد کے اگلے مورچوں پر موجود ہے۔

چمن بارڈر کی بندش کے باعث پاک افغان دوطرفہ تجارت اور پیدل آمدورفت بھی نہیں ہو رہی۔

دوسری جانب سرحدی حد بندی سے متعلق رپورٹس کابل اور اسلام آباد کو موصول ہو چکی ہیں، ان جیالوجیکل سروے رپورٹس پر جلد فیصلہ ہونے کا امکان ہے، افغان جارحیت سے متاثرہ علاقوں کلی لقمان اور کلی جہانگیر میں مردم شماری کا رکا ہوا کام تاحال شروع نہیں کیا جاسکا تاہم شہری علاقوں میں مردم شماری پاک فوجی کی نگرانی میں جاری ہے۔


مزید پڑھیں : چمن: باب دوستی آج ساتویں روزبھی بند


یاد رہے کہ افغان جارحیت کے بعد پاک افغان سیکیورٹی حکام کے درمیان باب دوستی پر فلیگ میٹنگ ہوئی تھی، جس میں دونوں جانب سےگوگل سروےمیپ،جیولوجیکل سروے میپ پر اتفاق کیا گیا ، میٹنگ میں کہا گیا کہ جیولوجیکل سروے ماہرین صورتحال کا جائزہ لیں گے اور افغان فورسز کے نقشوں میں فرق پایا گیا جو دور کیا جائے گا۔

سروے میں نقشوں کے ذریعے متنازع حدود کا تعین کیا جارہا ہے، پاک افغان ٹیموں کے نقشوں میں واضح فرق نہیں۔

سیکیورٹی زرائع کے مطابق فلیگ میٹنگ میں پاکستان کی جانب سے وفد کی قیادت سیکٹر کمانڈر ناردرن بریگیڈیئر ندیم سہیل نے کی جبکہ افغان فورسز کی جانب سے کرنل شریف فلیگ میٹنگ میں موجود تھے۔


مزید پڑھیں : چمن : افغان فورسز کی گولہ باری و فائرنگ،10 شہری شہید، 45زخمی


واضح رہے کہ گزشتہ روز چمن کےگاؤں کلی لقمان،کلی جہانگیر میں افغان فورسز نے مردم شماری کی ٹیم پر فائرنگ اور گولہ باری کی، جس کے نتیجے میں 10 افراد شہید اور 45زخمی ہوگئے تھے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں