پاک چین تعلقات امریکا سے کشیدگی کی بڑی وجہ ہے،سیکریٹری خارجہ اعزاز چوہدری -
The news is by your side.

Advertisement

پاک چین تعلقات امریکا سے کشیدگی کی بڑی وجہ ہے،سیکریٹری خارجہ اعزاز چوہدری

اسلام آباد: سیکرٹری خارجہ اعزاز چوہدری کا کہنا ہے کہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان کشیدگی حکومت اور عوام کے لیے نئی بات نہیں،امریکہ کی جانب سے بے اعتناعی کے عادی ہو چکے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق میڈیا کو امریکہ پاکستان مزاکرات کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے سیکرٹری خارجہ اعزاز چوہدری نے کہا کہ پاکستان اور امریکہ کے درمیان جاری کشیدگی کی بنیادی وجہ پاکستان کے چین کے ساتھ خوشگوار تعلقات ہیں، جب کہ امریکہ کی جانب سے بھارت کی طرف جھکاؤ بھی اس کی ایک وجہ ہے۔

سیکرٹری خارجہ نے واضح کیا کہ دہشت گردی کے خلاف جاری جنگ میں پاک فوج کے 5 ہزار جوانوں نے شہادت پائی ہیں ، سب سے زیادہ جانی اور مالی نقصان پاکستان کا ہوا ہے، ہم دہشت گردی کے مکمل خاتمے کی طرف بڑھ رہے تھے اور اسی سلسلے میں افغانستان میں امن مزاکرات کے لیے متحرک بھی تھے لیکن امریکہ نے ڈرون حملہ کرنے میں جلدی کردی۔

انہوں نے امریکہ کی جانب سے نوشکی میں کیے گئے ڈرون حملے میں ملا اختر منصور کی ہلاکت کے سوال کے جواب میں کہا کہ امریکہ نے ڈرون حملہ کر کے ملکی سالمیت اور خود مختاری کو ٹھیس پہنچایا ہے،جس پر کوئی سودے بازی نہیں کی جا سکتی۔

انہوں نے واضح کیا دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہراوّل دستہ ہیں، لیکن کچھ معاملات میں امریکہ کے ساتھ بالکل تعاون نہیں کر سکتے، جن میں سرفہرست ملکی خودمختاری اور سالمیت ہے، جسے ڈرون حملوں کے ذریعے نقصان پہنچایا گیا ہے۔

سیکرٹری خارجہ کا کہنا تھا کہ افغانستان کا صبہ قندھار پاک چائنا اقتصادی راہداری سے سب سے پہلے فائدہ اُٹھانے والا علاقہ ہے لہذا کسی پڑوسی ملک کو پاک چائنا اقتصادی راہداری پر شکوک و شبہات کا شکار نہیں ہونا چاہیے۔

سیکرٹری خارجہ اعزاز چوہدری نے پاکستان اور امریکی وفد کے ساتھ بات چیت کے حوالے سے بتایا کہ امریکہ سے کہا گیا ہے کہ بتایا جائے امن کا عمل بات چیت سے آگے بڑھانا ہے یاجنگ سے؟ امریکہ نے جہاں 16 سال جنگ کو دیے ہیں وہاں 6 ماہ افغان امن مزاکرات کو بھی دے دیتا تو اچھا ہوتا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں