The news is by your side.

Advertisement

انسانی اسمگلنگ میں ملوث افراد اور این جی اوز کے گرد گھیرا تنگ کرنے کا فیصلہ

اسلام آباد: وزیر داخلہ چوہدری نثار نے کہا ہے کہ نادرا نے انسانی اسمگلنگ میں مطلوب ملزمان کا ڈیٹا تیار کرلیا، انسانی اسمگلنگ میں ملوث افراد اور این جی اوز کے خلاف ایکشن کے لیے خصوصی سیل تشکیل دیا جائے گا۔

تفصیلات کے مطابق چوہدری نثار کی زیر صدارت اجلاس منعقد کیا گیا جس میں غیر ملکی این جی اوز کی رجسٹریشن کا معاملہ زیر بحث آیا، اجلاس میں 73 غیر ملکی این جی اوز کو پاکستان میں کام کرنے جبکہ 23 کی رجسٹریشن منسوخ اور 20 کی رجسٹریشن معطل کرنے کا فیصلہ مؤخر کیا گیا۔

اس موقع پر وفاق وزیر داخلہ نے کہا کہ این جی اوز کی رجسٹریشن کا معاملہ ریاستی سیکیورٹی سے متعلق ہے، اس سے متعلق قوانین بنانا ہمارے لیے اہم پیش رفت ہے۔

انہوں نے کہا کہ این جی اوز معاشی اور سماجی شعبے میں اہم کردار ادا کرسکتی ہیں، مشکوک سرگرمیوں میں ملوث غیر ملکی این جی اوز کی رجسٹریشن منسوخ کردی گئی جبکہ منظوری حاصل نہ کرنے والی این جی اوز کو اپیل کا حق دیا گیا ہے۔

چوہدری نثار نے کہا کہ نادرا نے انسانی اسمگلنگ میں ملوث ملزمان کا ڈیٹا بیس تیار کرلیا، انسانی اسمگلنگ میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی کے لیے خصوصی سیل تشکیل دیا جائے گا جس میں نادرا، امیگریشن اور ایف بی آر کے نمائندے شامل ہوں گے۔

اُن کا کہنا تھا کہ سیل کی تشکیل کے فوری بعد تمام مطلوب انسانی اسمگلرز کے ریڈ وارنٹ جاری کیے جائیں گے، انسانی اسمگلنگ کی روک تھام کے لیے صوبوں، نیم فوجی دستوں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں سے مدد لی جائے گی، خصوصی سیل کی مٹینگ ہر دو ماہ بعد منعقد کی جائے گی۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں