site
stats
بزنس

دبئی، پراپرٹیز میں سرمایہ کاری، پاکستانی چوتھے نمبر پر آگئے

دبئی : پراپرٹیز میں سرمایہ کاری کرنے والے ممالک میں پاکستانی شہری چوتھے نمبر پر آگئے، انہوں نے دبئی میں 7 ارب درہم کی جائیدادیں خرید لیں۔

گلف نیوز کے مطابق ہر سال کی اس برس بھی دبئی میں پراپرٹی کی خرید و فروخت میں سرمایہ کاری اپنے عروج پر رہی اور دنیا بھر کے سرمایہ کاروں نے اس جدید شہر کو محفوظ سرمایہ کاری کی جنت تصور کرتے ہوئے اپنا سرمایہ پراپرٹی کے شعبے میں لگایا۔

دبئی لینڈ ڈپارٹمنٹ کی جانب سے جاری کردہ اعداد وشمار کے مطابق گزشتہ 18 ماہ کے دوران دبئی میں پاکستان اور بھارتی افراد نے پراپرٹی کے کاروبار میں دلچسپی کا اظہار کرتے ہوئے مشترکہ طور پر 27 ارب درہم کی مالیت کی سرمایہ کاری کی جو کہ اماراتی سرمایہ کاروں کے بعد سب سے بڑی سرمایہ کاری ہے۔

اس مشترکہ سرمایہ کاری میں 20 ارب درہم کی سرمایہ کاری بھارتی افراد اور 7 ارب درہم کی سرمایہ کاری پاکستانی شہریوں نے کی۔

اسی طرح خلیجی ممالک میں سعودی عرب بازی لے گیا اور سعودی سرمایہ کاروں نے 12 ارب درہم کی جائیدادیں خریدیں جب کہ مصر اور اردن کے سرمایہ کاروں نے 4 ارب درہم کی جائیدادوں کی سودے بازی کی۔

تاہم سب سے زیادہ سرمایہ کاری کا اعزاز متحدہ عرب امارات کے پاس ہی رہا اور گزشتہ برسوں کی طرح اس سال بھی امارتی سرمایہ کاروں نے اپنے شہر دبئی میں سب سے زیادہ سرمایہ کاری کرتے ہوئے 34.4 ارب درہم کی پراپرٹی کی خرید و فروخت کیں۔

پاکستانی چوتھے نمبر پر 

مختصراً کہا جائے تو دبئی میں پراپرٹی کے شعبے میں مقامی افراد 34.4 ارب سرمایہ کاری کے ساتھ اول نمبر پر رہے، 20 ارب درہم کے ساتھ بھارتی شہری دوسرےنمبر پر، 12 ارب درہم کے ساتھ  سعودی شہری تیسرے نمبر پر اور 7 ارب درہم سرمایہ کاری کے ساتھ پاکستانی سرمایہ کار چوتھے نمبر پر ہیں۔

خیال رہے کہ جنوری 2016 سے اب تک دبئی لینڈ ڈپارٹمنٹ کے اعداد وشمار کے مطابق پراپرٹی کی خرید و فروخت سے متعلق 71 ہزار معاہدے رجسٹرڈ ہوئے جو کہ ایک حوصلہ افزاء تعداد ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top