The news is by your side.

ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ میں پاک بھارت مقابلے، تاریخ پر ایک نظر

ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کے دوران آٹھ مرتبہ پاکستان اور بھارت کی ٹیمیں آپس میں ٹکرائیں لیکن سخت مقابلے کے باوجود فتح روائتی حریف نے سمیٹی۔

تفصیلات کے مطابق ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کا سب سے بڑا مقابلہ آج دبئی انٹرنیشنل اسٹیڈیم میں ہوگا، جہاں روایتی حریف پاکستان اور بھارت کی ٹیمیں ٹکرائیں گی، میچ پاکستانی وقت کے مطابق شام 7 بجے شروع ہوگا۔

پاکستان اور بھارت سمیت دنیا بھر کے کروڑوں کرکٹ شائقین اس مقابلے کا شدت سے انتظار کررہے ہیں لیکن کیا آپ جانتے ہیں کہ دونوں ٹیموں کا ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کے دوران کتنی مرتبہ آمنا سامنا ہوا ہے۔

پہلا ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ 2007

ٹی ٹوئنٹی کرکٹ ورلڈ کپ کا آغاز 2007 میں ہوا جس میں پاکستان اور بھارت کے درمیان دو مقابلے ہوئے، جس میں قومی ٹیم کی کپتانی شعیب ملک کررہے تھے۔

پہلا مقابلہ 14 ستمبر 2007 میں ڈربن میں کھیلا گیا جس میں بھارتی ٹیم نے 7 وکٹوں کے نقصان پر پاکستان کو 141 رنز کا ٹارگٹ دیا تھا۔

قومی ٹیم نے مقررہ اوورز میں 7 وکٹ گنواں کر 141 رنز بناکر میچ برابر کردیا تھا جس کے بعد بول آؤٹ پیٹرن کے ذریعے میچ کے فاتح کا فیصلہ کیا گیا جس میں بھارت نے فتح اپنے نام کی۔

واضح رہے کہ بول آؤٹ پیٹرن میں دونوں ٹیم کے پانچ گیند بازوں کو ایک ایک بال خالی پچ پر پھینک کر وکٹ کا نشانہ لینا ہوتا ہے، جس میں تین گیندیں اسٹمپ یعنی وکٹ پر لگنا ضروری ہے۔

اس ورلڈ کپ میں قومی ٹیم فائنل تک پہنچنے میں کامیاب ہوئی، جہاں روئتی حریف بھارت نے دوسرا ٹاکرا 24 ستمبر 2007 کو جوہانسبرگ میں ہوا۔

اس مقابلے میں بھارت نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 20 اوورز میں 157 رن اسکور کیے جس کے تعاقب میں پاکستانی کھلاڑی 19.3 اوورز میں 152 رنز بناکر آل آؤٹ ہوگئے۔

کرکٹ پر تجزیہ کرنے والوں کا کہنا ہے کہ 2007 ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کے فائنل میں مصباح الحق نے اچھا کھیل پیش کیا لیکن ان کا ایک غلط شارٹ ٹیم کی شکست کا باعث بنا۔

دوسرا ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2009

دوسرے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں پاکستان اور بھارت کے درمیان کوئی مقابلہ نہیں ہوا جب کہ اس ورلڈ کپ میں پاکستان نے یونس خان کی کپتانی میں فائنل تک رسائی حاصل کی اور قومی کھلاڑیوں نے سخت مقابلے کے بعد ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کے فاتح کا لقب اپنے نام کرنے میں کامیاب ہوئے۔

تیسرے ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کا انعقاد 2010 میں ہوا جس میں روائتی حریف پاکستان اور بھارت کے درمیان کوئی مقابلہ نہیں ہوا۔

چوتھا ٹی ٹوئنٹی ورکپ 2012

30 ستمبر 2012 کو محمد حفیظ کی کپتانی میں پاکستان کی ٹیم ایک مرتبہ پھر بھارت ٹکرائی، جس میں پاکستان نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے روایتی حریف کو 128 رنز کا ٹارگٹ دیا جو بھارتی کھلاڑیوں نے 17 اوورز میں 2 وکٹ کے نقصان پر باآسانی مکمل کرکے کامیابی اپنے نام کرلی۔

پانچواں ٹئی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2014

سنہ 2014 میں بھارت نے پاکستان کو 7 وکٹوں سے شکست دی، اس مقابلے میں بھارت نے ٹاس جیت کر پاکستان کو پہلے بیٹنگ کی پیشکش کی۔

قومی ٹیم نے روایتی حریف کی پیشکش قبول کرتے ہوئے پہلے بیٹنگ کی اور بھارت کو 130 رنز کا ہدف دیا جو مخالف ٹیم نے 18 اعشاریہ 3 اوررز میں 7 وکٹ کے نقصان پر باآسانی حاصل کرلیا۔

2014 ورلڈ کپ میں بھی محمد حفیظ ہی قومی ٹیم کے کپتان تھے۔

چھٹا ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ 2016

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں شکست کی روایت برقرار رہی، اس میچ میں بھی بھارت نے ٹاس جیت پر پہلے باؤلنگ کا فیصلہ کیا اور پاکستان کی جانب سے دئیے گئے 118 رنز کا ہدف 6 وکٹ کے نقصان پر حاصل کرلیا۔

اس ورلڈ کپ میں شاہد آفریدی پاکستان کرکٹ ٹیم کی کپتانی کے فرائض انجام دے رہے تھے، جب کہ مخالف ٹیم کے کپتان ایم ایس دھونی تھے۔

واضح رہے کہ یہ رپورٹ صرف ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں کھیلے گئے میچز سے متعلق ہے۔ پاکستان ٹی ٹوئنٹی کرکٹ سیریز کی فہرست میں طویل وقت تک پہلے نمبر پر براجمان رہا ہے اور اب بھی پاکستانی ٹیم آئی سی سی کی رینکنگ میں تیسرے نمبر پر موجود ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں