The news is by your side.

Advertisement

بھارت نے کرتارپور راہداری پر پاکستان کے بھیجے مسودے پر گھٹنے ٹیک دئیے

اسلام آباد: بھارت نے کرتارپور راہداری پر پاکستان کے بھیجے مسودے پر گھٹنے ٹیک دئیے اور کرتارپور راہداری منصوبے پر بھارت پاکستان کے مسودے پر رضامند ہوگیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ بھارت میں کرتارپور راہداری کھولنے کے مسودے پر اتفاق کرلیا گیا ہے۔

سفارتی ذرائع کے مطابق پاکستان، بھارت 23 اکتوبر کو کرتارپور راہداری معاہدے پر دستخط کریں گے، بھارت نے فی یاتری 20 ڈالرز سروس فیس وصولی کے پاکستان کے فیصلے کو تسلیم کرلیا ہے۔

پاکستان اور بھارت 23 اکتوبر کو کرتارپور معاہدے پر گراؤنڈز پر دستخط کریں گے

پاکستان اور بھارت 23 اکتوبر کو کرتارپور معاہدے پر گراؤنڈز پر دستخط کریں گے، ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل معاہدے پر دستخط کریں گے۔

سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ دونوں جانب سے مسودے پر دستخط فوکل پرسن کریں گے، پاکستان نے واضح کردیا کرتارپور راہداری جیسے خیرسگالی اقدام کی مثال کہیں نہیں ہے۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز کے مطابق بھارت سے یاتریوں کے اعدادوشمار، تفصیلات کی پاکستان کو فراہمی کی آزمائش کی گئی، بھارتی حکام نے کرتارپور گراؤنڈز پر زیرو پر آزمائشی طور پر تفصیلات سے آگاہ کیا۔

دوسری جانب وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے اے آر وائی نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ خوشی ہے بھارت مان گیا ہے، سکھ برادری کو دل کی گہرائیوں سے مبارک باد پیش کرتا ہوں۔

انہوں نے کہا کہ دنیا بھر کی سکھ برادری کو خوش آمدید کہیں گے، آنے والے دنوں میں سکھ یاتریوں کے لیے مزید اقدامات کریں گے۔

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کرتارپور راہداری کی تقریب میں من موہن سنگھ کو دعوت نامہ دیا ہے، انہوں نے ہماری دعوت کو قبول کیا ہے، من موہن تقریب میں ایک شہری کی حیثیت سے شرکت کریں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں