سندھ طاس معاہدے پر پاک بھارت مذاکرات کا امکان ‌ہے، بھارتی اخبار -
The news is by your side.

Advertisement

سندھ طاس معاہدے پر پاک بھارت مذاکرات کا امکان ‌ہے، بھارتی اخبار

نئی دہلی : ایک بھارتی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ سندھ طاس معاہدے کے تحت انڈس ریور کمیشن کا اجلاس اس ماہ کے تیسرے ہفتے میں ہوگا۔

بھارتی اخبار کے مطابق سندھ طاس معاہدہ پر اس ماہ پاک بھارت مذاکرات ہو سکتے ہیں، دونوں ملکوں کے درمیان معاہدے کے تحت دریائے سندھ کے پانی پر کمیشن کا اجلاس اکتیس مارچ سے پہلے ہونا ہے اور امکان ہے کہ یہ اجلاس مارچ کے تیسرے ہفتے میں ہو گا۔

معاہدے کے تحت پاکستان اور بھارتی حکام کو ہر سال ملنا ضروری ہے ، اگر اجلاس نہ ہوا تو سندھ طاس معاہدے کی خلاف ورزی ہوگی، دریائے سندھ کے پانی پرہونے والے مذاکرات کے نکات کو حتمی شکل دینا ابھی باقی ہے ۔

یاد رہے کہ کمیشن کا گذشتہ اجلاس جون 2015 میں ہوا تھا۔

خیال رہے کہ بھارتی وزیر اعظم جواہر لال نہرو اور پاکستان کے صدر ایوب خان نے 1960 کو عالمی بینک کی ثالثی میں سندھ طاس معاہدہ پر دستخط کیے تھے، جس کی رو سے چھ دریاؤں کو دونوں ملکوں میں تقسیم کیا گیا تھا۔

پاکستان بڑی حد تک دریائے سندھ کے پانی پر انحصار کرتا ہے۔ اس کے تقریباً65 فیصد حصے کو اسی دریا سے پانی ملتا ہے۔ اگر بھارت اپنے یہاں سے پاکستان کی طرف جانے والی دریاؤں کا پانی روک دیتا ہے تو پاکستان میں پانی کا زبردست بحران پیدا ہوجائے گا تاہم آبی ماہرین کہتے ہیں کہ اس سے خود بھارت کو بھی نقصان ہوگا اور جموں و کشمیر نیز بھارتی پنجاب کے علاقے سیلاب کی زد میں آجائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں