The news is by your side.

Advertisement

بیرون ملک سے آنے والے مسافروں کے لیے تیار پاک پاس ایپ میں تکنیکی خرابی، استعمال موخر

کراچی : کورونا وائرس سے بچاؤ کے لئے بیرون ملک سے آنے والوں کے لیے پاک پاس موبائل ایپ میں تکنیکی خرابی کے باعث استعمال موخر کردیا گیا، موبائل ایپ متعارف کروانے کا مقصد پاکستان پہنچنے والے مسافروں کا 14دن تک قرنطینہ موجودگی کو لازمی بنانا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی کی کورونا وائرس سے بچاؤکے لئےبیرون ملک سے آنے والے مسافروں کے لیے تیار پاک پاس ایپ فعال نہ ہو سکی، تکنیکی خرابی کے باعث پاک پاس ایپ کا استعمال مؤخر کرکے نوٹی فکیشن جاری کردیا گیا ہے۔

نوٹیفکیشن سی اے اے کے ڈائریکٹر ائیرٹرانسپورٹ نے جاری کیا ہے، جس میں کہا گہا موبائل ایپ متعارف کروانے کا مقصد پاکستان پہنچنے والے مسافروں کا 14دن تک قرنطینہ موجودگی کو لازمی بنانا ہے۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی نے بیرون ملک سے آنے والے مسافروں کی ٹریکنگ کیلئے ایپ تیار کی تھی اور بیرون ملک سے آنے والے تمام مسافروں کو پاکپاس موبائل ایپ ڈاون لوڈ کرنا لازمی قراردیا گیا تھا۔

پاکپاس موبائل کے لازمی استعمال کے حوالے سے ائیرپورٹس اور ملکی و غیر ملکی ائیرلائنز انتظامیہ کو ہدایات جاری کی گئی تھیں ،فیملی کی صورت میں بھی ایک ہی فرد نے موبائل ایپ انسٹال کرنا تھی جبکہ اسمارٹ فونز نہ رکھنے والے مسافروں کو ائیرپورٹ پر سخت عمل سے گزارا جانا ہے۔

ایپ سے کرونا ٹیسٹنگ اور ہوم آئسولیشن کے بارے میں معلومات اکٹھا کی جا سکیں گی، سی اے اے نے ہدایات جاری کی ہیں کہ ٹکٹ بک کرواتے وقت ایئرلائن انتظامیہ مسافروں کو بذریعہ ای میل موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کی ہدایت کرے، اور چیک اِن، بورڈنگ ڈیسک پر مسافروں کے موبائل میں ایپ کی موجودگی یقینی بنائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں