The news is by your side.

Advertisement

پاکستان سیمی فائنل کس لمحے ہارا؟ وقار یونس کی ماہرانہ رائے

سابق کرکٹر وقار یونس کا کہنا ہے کہ سیمی فائنل میں کیچ چھوٹنے کے بعد بھی میچ کی بازی پلٹی جاسکتی تھی لیکن اس کے بعد ٹیم بدحواس ہوگئی۔

تفصیلات کے مطابق اے اسپورٹس کے پروگرام دی پویلین میں سابق کھلاڑی وقار یونس نے ٹی 20 ورلڈ کپ 2021 کے سیمی فائنل میچ پر اپنی ماہرانہ رائے دی۔

آئی سی سی ٹی 20 ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں پاکستان نے آسٹریلیا سے 5 وکٹوں سے شکست کھائی، سابق کھلاڑی وقار یونس کا کہنا تھا کہ حسن علی کے ہاتھ سے جب کیچ گرا تو ٹیم بدحواس ہوگئی اور اس کے سوچنے سمجھنے کی صلاحیت ختم ہوگئی۔

انہوں نے کہا کہ اس کے بعد بھی اگر حواس قابو میں رکھے جاتے تو میچ کی بازی پلٹی جاسکتی تھی۔

وقار یونس کا کہنا تھا کہ شاہین آفریدی کی مسلسل کوشش تھی کہ وکٹ لی جائے جس کے نتیجے میں اسے پے در پے چھکے کھانے پڑے۔

انہوں نے کہا کہ پہلا چھکا لگنے کے بعد اگر میچ کی رفتار 2 سے 4 منٹ کے لیے سست کرلی جاتی تو ٹیم کو سوچنے کا موقع مل سکتا تھا، اور وہ پلان بی پر عمل کرسکتے تھے۔

سابق کھلاڑی وسیم اکرم کا کہنا تھا کہ شاہین آفریدی کے کیریئر کی ابھی شروعات ہے وہ اس میچ سے بہت کچھ سیکھ کر خود کو بہتر کرسکتا ہے، اور مستقبل میں ایک ذمے دار بولر کی صورت میں سامنے آسکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ اسی طرح حسن علی بھی اچھا کھلاڑی ہے، یہ مینجمنٹ اور کوچز کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس کی حوصلہ افزائی کریں اور اس کا اعتماد بحال کریں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں