The news is by your side.

پاکستان نے سیمی فائنل میں رسائی کے ساتھ ایک منفرد ریکارڈ بھی اپنے نام کرلیا

ٹی 20 ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں رسائی کے ساتھ پاکستان ٹیم نے ایک منفرد ریکارڈ بھی اپنے نام کرلیا ہے اور وہ اب تک 6 مرتبہ سیمی فائنل کھیلنے والی واحد ٹیم بن گئی ہے۔

ایڈیلیڈ میں کھیلے گئے ٹی 20 ورلڈ کپ کے سپر 12 مرحلے کے انتہائی اہم میچ میں پاکستان نے بنگلہ دیش کو 5 وکٹوں سے شکست دے کر جیسے ہی ٹورنامنٹ کے سیمی فائنل کے لیے کوالیفائی کیا ایک اور منفرد اعزاز قومی ٹیم کے نام کے ساتھ جُڑ گیا اور وہ کسی بھی ٹیم کا عالمی کپ میں چھٹی بار سیمی فائنل کے لیے رسائی حاصل کرنا ہے۔

کرکٹ کی دنیا میں جب سے مختصر دورانیے ٹی 20 کرکٹ شروع ہوئی ہے اور عالمی کپ کا انعقاد ہونا شروع ہوا ہے تب سے ہی پاکستان اس فارمیٹ اور عالمی کپ کی اہم اور کامیاب ترین ٹیموں میں سے ایک رہی ہے اور 2007 سے 2021 تک کے 14 سالہ سفر میں نہ صرف ایک بار ورلڈ چیمپئن رہی بلکہ دو بار فائنل اور رواں 2022 کے ورلڈ کپ کے سیمی فائنل مرحلے تک رسائی حاصل کرکے 6 بار فائنل فور میں پہنچنے والی پہلی ٹیم بن گئی ہے۔

اس سے ٹورنامنٹ سے قبل سب سے زیادہ سیمی فائنل کھیلنے کا اعزاز بھی قومی ٹیم کے پاس تھا اور 2021 تک 5 عالمی کپ کے سیمی فائنل کھیل چکی تھی، یوں رواں ورلڈ کپ میں پاکستان نے اپنا ہی ریکارڈ توڑ دیا ہے۔

اگر ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کی تاریخ پر نظر دوڑائیں تو پہلا عالمی کپ 2007 میں ہوا، افتتاحی ایڈیشن میں ہی پاکستان کی کارکردگی انتہائی شاندار رہی اور فائنل میں کرکٹ کی دو سپر پاورز پاکستان اور بھارت مدمقابل آئیں تاہم میدان بھارت نے مارا، دو سال بعد 2009 میں پاکستان ایک نئے عزم کے ساتھ یونس خان کی قیادت میں ٹورنامنٹ میں آئی اور ٹرافی لے کر واپس گئی، لارڈز کے تاریخی میدان میں کھیلے گئے فائنل میچ میں پاکستان نے سری لنکا کو شکست دے تاریخ رقم کی اور ٹرافی تھام کر قوم کا سر فخر سے بلند کیا، میچ کے ہیرو بوم بوم شاہد آفریدی رہے۔

یہ بھی پڑھیں: ٹی 20 ورلڈ کپ کی تاریخ، پاکستان کامیاب ٹیموں میں سے ایک

پاکستان جاری 8 ویں ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ میں چھٹی بار سیمی فائنل کے لیے کوالیفائی کرنے والی جہاں پہلی ٹیم بن گئی ہے اگر سیمی فائنل جیت جاتی ہے تو تیسری بار فائنل کھیلنے والی بھی پہلی ٹیم بن جائے گی۔

پاکستان نے اس سے قبل سال2007، 2009، 2010، 2012 اور 2021 کے سیمی فائنل کے لیے کوالیفائی کیا تھا جب کہ 2014 اور 2016 میں ٹیم پہلے مرحلے میں ہی ٹورنامنٹ سے باہر ہوگئی تھی۔

پاکستان کے علاوہ سری لنکا، ویسٹ انڈیز اور بھارت کی ٹیمیں چار چار بار جب کہ آسٹریلیا نے تین مرتبہ سیمی فائنل کھیلنے کا اعزاز پایا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں