site
stats
پاکستان

طورخم بارڈر سے بغیرسفری دستاویزات آمد کی مہلت ختم

پشاور: پاک افغان طور خم سرحد سے بغیر سفری دستاویزات آمد پر دی گئی مہلت ختم ہوگئی، پابندی پر آج سے عمل درآمد شروع کردیا گیا۔ چند روز قبل پاکستانی حکام نے افغان سرحد سے پاکستان آنے والے افراد کے لیے سفری دستاویزات لازمی قرار دیے تھے جن میں پاسپورٹ اور ویزا کی میعاد شامل ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان اور افغان حکام نے اس ضمن میں سخت اقدامات کیے ہیں، طورخم سرحد پر خاصہ دار اور بارڈر سیکیورٹی فورس نے کئی مقامات پر اپنے اہلکار تعینات کیے ہیں جو غیر قانونی طور پر پاکستان آنے والے افراد کو روک رہے ہیں۔

افغانستان سے پاکستان آنے والے افراد کے سفری کاغذات کی آٹھ مقامات پر جانچ پڑتال کی جارہی ہے جس کا مقصد دونوں ممالک کے درمیان سرحدی سیکیورٹی کی حالت زار بہتر بنانا ہے تاکہ امن کا مستقل قیام عمل میں لایا جاسکے۔

اطلاعات ہیں کہ بغیر سفری دستاویزات کے آنے اور جانے والے افراد کی تعداد دس ہزار یومیہ تک ہو گئی تھی جس کے بعد یہ قدم اٹھایا گیا۔

واضح رہے کہ دونوں بارڈر حکام کے درمیان مذاکرات کے دوران افغان حکام نے پابندی عائد کرنے کے لیے رمضان کے آخر تک مہلت طلب کی تھی تاہم پاکستانی حکام کی جانب سے اسے منظور نہیں کیا گیا، صرف دونوں ممالک میں آباد شنواری قبائل کو راہداری پرمٹ پر طور خم بارڈ سے 20 کلومیٹر اندر داخل ہونے کی اجازت دی گئی ہے جنہیں کچھ دنوں بعد سفری کاغذات مکمل کرانے ہوں گے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top