The news is by your side.

Advertisement

بابری مسجد کا متعصبانہ فیصلہ، پاکستان کی او آئی سی کے سفیروں کو بریفنگ

اسلام آباد: بابری مسجد سے متعلق بھارت کے متعصبانہ فیصلے پر پاکستان نے اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی) ممالک کے سفیروں کو بریفنگ دی۔

تفصیلات کے مطابق دفترخارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بتایا کہ سیکریٹری خارجہ سہیل محمود نے اوآئی سی ممالک کے سفیروں کو بابری مسجد کے تعصب پر مبنی فیصلے پر بریفنگ دی۔

ترجمان دفترخارجہ نے کہا کہ بھارت دعویٰ کرتا ہے بابری مسجد اس کا اندرونی معاملہ ہے، لیکن حقیقت بھارتی دعوؤں کے برعکس ہے، بابری مسجد 1992 سے مسلسل او آئی سی ایجنڈے کا حصہ ہے۔

واضح رہے کہ بھارتی سپریم کورٹ نے بابری مسجد کی متنازع زمین ہندوؤں کو دینے کا فیصلہ سناتے ہوئے کہا بھارتی حکومت کی زیرنگرانی بابری مسجد کی جگہ مندر بنے گا اور مسلمانوں کو ایودھیا میں متبادل جگہ دی جائے۔

فیصلے میں سنی اور شیعہ وقف بورڈز کی درخواستیں مسترد کردی گئیں تھیں اور کہا گیا تھا کہ تاریخی شواہد کے مطابق ایودھیارام کی جنم بھومی ہے، بابری مسجد کا فیصلہ قانونی شواہد کی بنیاد پر کیا جائے گا۔

بابری مسجد کی جگہ مندر بنے گا، بھارتی سپریم کورٹ کا فیصلہ

بعد ازاں پاکستان نے تاریخی بابری مسجد کے فیصلے پرشدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ بھارتی سپریم کورٹ کا فیصلہ ایک بار پھرانصاف کے تقاضے پورے کرنے میں ناکام رہا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں