The news is by your side.

Advertisement

ملکی آبادی 20 کروڑ 77 لاکھ ہوگئی، مردم شماری کے نتائج جاری

اسلام آباد:حکومت نے چھٹی مردم شماری کے عبوری نتائج کا اعلان کردیا جس کے مطابق ملکی آبادی 20 کروڑ 77 لاکھ ہوگئی جو کہ 1998ء میں 13 کروڑ تھی۔

یہ رپورٹ آج مشترکہ مفادات کونسل (سی سی آئی) کے اجلاس میں پیش کی گئی۔

اسٹیٹسٹکس (شماریات) بیورو آف پاکستان کی طرف سے جاری کردہ اعدادو شمار کے مطابق نئی مردم شماری کےتحت اس وقت پاکستان کی کل آبادی 20 کروڑ 77 لاکھ 74 ہزار 520 نفوس پر مشتمل ہے، آبادی کے لحاظ سے ملک کے سب سے بڑے صوبے کا اعزاز پنجاب کو ہی حاصل ہے اور اس کی آبادی 11 کروڑ 12 ہزار 442 افراد پر مشتمل ہے۔

census

ملک کو سب سے زیادہ ریونیو دینے والے صوبے سندھ کی آبادی 4کروڑ 78 لاکھ 86 ہزار 51 افراد پر مشتمل ہے،آبادی کے اعتبار سے تیسرے نمبر پر صوبہ خیبر پختون خوا ہے جس کی آبادی 3 کروڑ 5 لاکھ 23 ہزار 371 ہوچکی ہے۔

Pakistan population

اسی طرح رقبے کے لحاظ سے سب سے بڑے صوبے کا اعزاز رکھنے والا صوبہ بلوچستان آبادی کے اعتبار سے چوتھے نمبر پر ہے، اس کی آبادی ایک کروڑ 23 لاکھ 44 ہزار 408 افراد پر مشتمل ہے۔

نئی مردم شماری کے مطابق قبائلی علاقہ جات پر مشتمل علاقے فاٹا کی کل آبادی 50 لاکھ ایک ہزار 676 ہوگئی، بیورو آف شماریات کے مطابق وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کی کل آبادی 20 لاکھ 6ہزار 572افرادہوچکی ہے۔

population

خیال رہے کہ سال 1998ء کی مردم شماری کے تناسب سے 2017 تک ملکی آبادی میں 57 فیصد اضافہ ہوا اور سالانہ اعتبار سے دیکھا جائے تو ہر سال 2.7 فیصد اضافہ ہوا، 1998 میں یہ آبادی 13 کروڑ تھی جو اب 20 کروڑ 77 لاکھ ہوچکی ہے۔

ملک میں پہلی مردم شماری 1951 میں،دوسری 1961، تیسری 1972، چوتھی 1981،  پانچویں 1998 اور چھٹی مردم شماری اب 2017 میں ہوئی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں